’گاتا رہے میرا دل،‘ فلمی موسیقی کی جھلک

Image caption تجزیہ نگاروں نے اسے ایک تاریخی کتاب کا درجہ دیا ہے

اشاعتی ادارے ہارپر کولنز کی جانب سے حال ہی میں شائع ہونے والی کتاب ’گاتا رہے میرا دل، 50 کلاسیکی ہندی فلمی گیت‘ دو ہفتوں تک فروخت کی فہرست میں اوّل نمبر رہی۔

اس کتاب میں بھارتی سنیما کے پہلے نغمے ’بابل مورا نیہر چھوٹو جائے‘ سے لے کر سنہ 1992 میں آئی فلم ’روزا‘ کے نغموں ’دل ہے چھوٹا سا‘ تک کی فلمی موسیقی کے سفر کو بڑے سلیقے سے پیش کیا گیا ہے۔

تجزیہ نگاروں نے اس کتاب کو ایک تاریخی کتاب کا درجہ دیا ہے جو فلمی موسیقی کی تاریخ پر ایک کمال کی دستاویز ہے۔

انروددھ اور بالاجی وٹھّل اس کتاب کے مشترکہ مصنف ہیں۔ انرودھ اس سے قبل آر ڈی برمن پر لکھی اپنی کتاب کے لیے قومی ایوارڈ جیت چکے ہیں۔

انروددھ اور بالاجی وٹھّل نے بی بی سی سے خاص بات چیت میں بتایا کہ اس کتاب کی کامیابی کا کریڈٹ وہ ان کہانیوں کو دیتے ہیں جو اس کتاب میں مذکورہ نغموں سے وابستہ ہیں۔

Image caption اس کتاب کی کامیابی کا کریڈٹ وہ ان کہانیوں کودیتے ہیں جو اس کتاب میں مذکورہ نغموں سے وابستہ ہیں

بالاجی کہتے ہیں: ’فلمی موسیقی اور اس کے نغموں کی درجہ بندی کرنا تو ممکن نہیں ہے، پھر بھی ہم نے طے شدہ معیار پر ان نغموں کی فہرست تیار کی ہے اور آپ اس سے متفق ہو سکتے ہیں۔‘

بی بی سی سے بات چیت کے دوران دونوں مصنفوں نے ان نغموں کے معیار (میلوڈي اور مقبولیت وغیرہ) کے ساتھ ساتھ چند دلچسپ واقعات اور کہانیوں کی وجہ سے ان نغموں کو اس کتاب میں جگہ دی ہے اس سے متعلق انھوں کئی دلچسپ باتیں بتائی ہیں۔

اس کتاب کے 50 نغموں میں سے پانچ نغموں سے وابستہ ایسی منفرد کہانیاں آپ یہاں پڑھ سکتے ہیں جس کی وجہ سے یہ نغمےتاریخ کا حصہ بن گئے۔

تیرے بنا آگ یہ چاندنی ( فلم آوارہ)

تصویر کے کاپی رائٹ SHEMAROO
Image caption آر کے سٹوڈیوز میں بنے اتنے بڑے اور خوبصورت سیٹ کو تیار کرنے میں تین ماہ کا وقت لگا تھا

سنہ 1951 میں آئی فلم آوارہ کا یہ نغمہ اس لسٹ میں ٹائٹل گیت ’آوارہ ہوں‘ کو پیچھے چھوڑ کر اس لسٹ میں اس لیے شامل ہوگیا کیونکہ یہ بالی وڈ کا دوسرا ایسا گانا تھا جو کسی خواب پر فلمایا گیا تھا اور اس نغمے کے لیے پہلی بار کسی فلم میں اتنا شاندار سیٹ بنا تھا۔

آر کے سٹوڈیوز میں بنے اتنے بڑے اور خوبصورت سیٹ کو تیار کرنے میں تین ماہ کا وقت لگا تھا اور اس نغمے کو 72 گھنٹوں میں شوٹ کیا گیا تھا۔ بڑے پردے پر یہ کسی تھری ڈی فلم سا لگتا تھا۔

وہ شام کچھ عجیب تھی ( فلم خاموشی)

تصویر کے کاپی رائٹ EROS
Image caption اس سے پہلے تک کشور دا کو انڈسٹری میں ہلکے اور انرجی سے پر نغمے گانے والا گلوکار مانا جاتا تھا

سنہ 1970 میں آنے والی اس فلم کے موسیقار ہیمنت کمار تھےاور اس فلم کے کسی ایک نغمے کو منتخب کرنا کافی مشکل کام ہے کیونکہ اسی فلم میں ’تم پکار لو‘جیسا نغمہ موجود ہے۔ لیکن ’وہ شام‘ اس کلاسک لسٹ میں ہے کیونکہ اسی نغمے سے گلو کار کشور کمار نے کچھ ٹھہرے ہوئے انوکھے انداز میں گانوں کی ابتدا کی تھی۔

اس سے پہلے تک کشور دا کو انڈسٹری میں ہلکے اور توانائی سے پر نغمے گانے والا گلوکار مانا جاتا تھا لیکن ہیمنت کمار کی ضد پر انھوں نے یہ گیت گایا اور ایک نئی تاریخ رقم کی۔ اس نغمے کو کولکتہ میں دریائے ہگلی پر کھلے میدان میں فلمایا گیا تھا اور ہزاروں لوگ شوٹنگ کے دوران موجود تھے۔

ایک پیار کا نغمہ ہے (فلم شور)

تصویر کے کاپی رائٹ YOUTUBE
Image caption اس فلم میں نندا کے کردار کے لیے منوج کمار، شرمیلا ٹیگور اور سمیتا پاٹل کے پاس گئے تھے

سنہ 1972 میں آنے والی فلم ’شور‘ کا یہ نغمہ اتنا مقبول ہوا تھا کہ اس گانے میں موجود اداکارہ نندا کو اس فلم کی لیڈ اداکارہ سمجھاجانے لگا تھا جبکہ لیڈ اداکارہ جیا بہادري تھیں۔

اس گانے میں موسیقار لكشمي كانت پيارے لال میں سے لكشمي كانت نے بھی آواز دی ہے اور لتا منگیشکر نے بھی ایک بچے کی آواز میں گاناگایا ہے۔ اس فلم سے منسلک منفرد قصہ یہ تھا کہ اس فلم میں نندا کے کردار کے لیے منوج کمار، شرمیلا ٹیگور اور سمیتا پاٹل کے پاس گئے تھے لیکن ان کے انکار کے بعد ہی یہ رول نندا کوملا اور وہ ہٹ ہو گئیں۔

قسمیں وعدے پیار وفا سب (فلم اُپکار)

تصویر کے کاپی رائٹ DAILYMOTION
Image caption اسی فلم سے اداکار پران اپنی دو عشروں پرانی ویلن کی شبیہ توڑنے میں کامیاب ہوئے اور انھیں کچھ مثبت کردار ملنا شروع ہو گئے

سنہ 1967 میں آئی یہ فلم سپر ہٹ تھی لیکن اس کے ایک اورگانے ’میرے ملک کی سرزمین‘ کے بارے میں مصنف شک میں تھے، لیکن ’قسمیں وعدے‘ نے جنگ جیتی۔

مصنفین کے مطابق یہ گانا پہلے کشور جی کو پیش کیا گیا تھا لیکن اس نغمے کو سننےسمجھنے اور گنگنانے کے بعد کشور دا نے منّا ڈے کو یہ گانا دیے جانے کی صلاح دی

اور ان کا یہ مشورہ کام کر گیا کیونکہ منّا ڈے نے اس گیت میں وہ جذبہ بھر دیا جس کی کلیّان جی آنند جی کو تلاش تھی۔ ویسے فلم ’اپکار‘سے وابستہ ایک خاص بات یہ بھی تھی کی اسی فلم سے اداکار پران اپنی دو عشروں پرانی ویلن کی شبیہ توڑنے میں کامیاب ہوئے اور انھیں کچھ مثبت کردار ملنے شروع ہوئے۔

تم آگئے ہو (فلم آندھی)

تصویر کے کاپی رائٹ DAILYMOTION
Image caption نغمہ’تیرے بغیر زندگی سے کوئی‘ یوٹیوب پر سب سے زیادہ بار دیکھے گئے ریٹرو گانوں کی لسٹ میں ٹاپ پر ہے

س فلم کے اس نغمے کو اس لسٹ میں لانے کی ایک بڑی تکنیکی وجہ ہے لیکن اسی فلم کے دو دوسرے نغمے ’اس موڑ سے جاتے ہیں‘ اور ’تیرے بغیر زندگی سے کوئی‘ بھی کچھ کم نہیں ہیں۔ ’اس موڑ سے جاتے ہیں‘ کی موسیقی کمپوز کرتے وقت گلزار سے آر ڈی برمن نے پوچھا تھا ’نشیمن جگہ کہاں پر ہے؟‘

نغمہ’تیرے بغیر زندگی سے کوئی‘ یوٹیوب پر سب سے زیادہ بار دیکھے گئے ریٹرو گانوں کی لسٹ میں ٹاپ پر ہے۔ اسی فلم سےگلزار اور آر ڈی برمن کی دوستی بھی گہری ہوگئی تھی۔

اسی بارے میں