’مائی نیم از خان‘ کا نیا مداح

Image caption کٹی بٹی کی کامیابی پر عامر خان کا فلمی کریئر موقوف نظر آ رہا ہے

جہاں سلمان خان، عامر خان اور شاہ رخ خان ہٹ فلموں کے ریکارڈ بنا رہے ہیں وہیں عمران خان فلاپ فلموں کا ریکارڈ قائم کرتے نظر آتے ہیں۔

گیارہ فلمیں لگاتار فلاپ دینے کے بعد عمران خان دو سال کے وقفے کے بعد نکھل اڈوانی کی فلم ’کٹّی بٹّي‘ سے بالی وڈ میں واپسی کر رہے ہیں۔

بالی وڈ راؤنڈ اپ سنیے

ان کی پہلی فلم ’جانے تو یا جانے نا‘ کے علاوہ ’دہلی بیلی‘ نے اچھا بزنس کیا تھا۔

عمران کی ریلیز ہونے والی آخری فلم ’گوری تیرے پیار میں‘ میں تھی جس نے باکس آفس پر بہت خراب کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا۔

عمران کی آنے والی فلم ’کٹی بٹي‘ کنگنا راناوت کے ساتھ ہے۔

اس فلم کے ٹریلر کو بہت سراہا جا رہا ہے جس سے بظاہر یہ نظر آ رہا ہے کہ یہ فلم عمران کے کریئر کو سنبھال سکتی ہے۔

حال ہی میں ’کٹی بٹي‘ کے ایک گانے پروموشن کے دوران فلم کے ہدایت کار نکھل نے کہا: ’ایک سال پہلے فلم پی کے کی شوٹنگ کے وقت میں نے عمران کو ذہن میں رکھ کر عامر کو اس فلم کی سکرپٹ سنائی تھی اور پھر ان کی تجویز کردہ ایک تبدیلی سے پوری فلم ہی بدل گئی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Dharma Production
Image caption اس فلم میں شاہ رخ خان نے ایک ذہنی طور پر متاثر شخص کا کردار ادا کیا ہے

’مائی نیم از خان‘ کا نیا مداح

کرن جوہر کی ہدایت کاری میں شاہ رخ خان اور کاجول کی فلم ’مائی نیم از خان‘ ہر چند کہ سنہ 2010 میں ریلیز ہوئي تھی لیکن اب انھیں اس فلم کا ایک نیا مداح ملا ہے۔

معروف مصنف اور ناول نگار پاؤلو کوہیلو نے اپنے ٹوئٹر پر لکھا کہ انھوں نے ’اس سال جو فلمیں دیکھیں اس میں مائی نیم از خان بہترین فلم تھی۔‘

کرن جوہر نے ان کے ٹوئٹر کا خیر مقدم کرتے ہوئے ان کا شکریہ ادا کیا۔

پاؤلو کوہیلو نے شاہ رخ خان اور کاجول کو مبارکباد پیش کی اور لکھا کہ اس فلم کو دیکھنے کے لیے انھیں چھ سال انتظار کرنا پڑا۔

انھوں نے لکھا: ’مائی نیم از خان کے لیے مبارکباد۔ میری خواہش ہے کہ یورپ میں ہم اس طرح کی مزید فلمیں دیکھیں۔ مجھے اس فلم کے لیے چھ سال انتظار کرنا پڑا۔‘

خیال رہے کہ یہ فلم اپنی ریلیز کے وقت متنازع ہو گئی تھی تاہم اس فلم نے پوری دنیا میں زبردست کمائی کی تھی۔

پاؤلو کوہیلو معروف ناول نگار ہیں ان کی کتاب ’دا الکیمسٹ‘ کا دنیا کی تقریبا 80 زبانوں میں ترجمہ ہو چکا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PIB
Image caption ادت نارائن کو عامر خان کی فلم ’قیامت سے قیامت تک‘ کے گیت ’پاپا کہتے ہیں بڑا نام کرے گا۔۔۔‘ سے شہرت ملی تھی

’رونا اور گانا کسے نہیں آتا‘

بالی وڈ کے معروف پلے بیک سنگر ادت نارائن کا کہنا ہے کہ اب تو ہر کوئی گانے لگا ہے اور اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کر رہا ہے۔

انھوں نے یہ باتیں پلے بیک سنگر کی مقبولیت میں کمی کے پیش نظر کہی۔

اس سے قبل امیتابھ بچن یا ایک دو دوسرے اداکاروں نے ایک آدھ فلم میں اپنی گائیکی کا جوہر دکھایا تھا لیکن اب یہ چلن قدرے عام ہوتا جا رہا ہے۔ فرحان خان ہوں یا ریتک روشن یا پھر سلمان خان۔

ادت نارائن کو عامر خان کی فلم ’قیامت سے قیامت تک‘ کے گیت ’پاپا کہتے ہیں بڑا نام کرے گا۔۔۔‘ سے شہرت ملی تھی۔

ان کا کہنا ہے کہ ’ایک وقت تھا کہ اچھے اچھے گلوکار ہوا کرتے تھے لیکن اب ایسا ہے کہ ہر کوئی گا رہا ہے اور ویسے بھی کہا جاتا ہے کہ گانا اور رونا کسے نہیں آتا۔

’لیکن پہلے ایک پروفیشنلزم تھی۔ بڑے بڑے سنگر تھے انھوں نے بڑا کام کیا۔ پھر ایک ایسا دور آیا کہ ہم لوگوں کو بھی اچھے گیت ملے اور اچھا کام کرنے کا موقع ملا۔ اور آج تو ہر فنکار کو اپنی صلاحیت دکھانے کا موقع مل رہا ہے۔‘

اسی بارے میں