’وبا کے دنوں میں محبت‘ کے شہر میں گارشیا مارکیز کی راکھ

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption گارشیا مارکیز سنہ 1984 میں کارتاگینا آئے اور ایک مقامی اخبار ایل یونیورسل میں بطور صحافی ملازمت حاصل کی

کولمبیا کے نوبل انعام یافتہ ناول نگار گیبریل گارشیا مارکیز کی راکھ کو دسمبر میں کولمبیا کے شہر کارتاگینا لے جایا جائے گا جہاں اسے مستقل طور پر شہر کے ہسٹورک سینٹر کے نو آبادیاتی دور کے حصے میں نمائش کے لیے رکھا جائے گا۔

گارشیا مارکیز نے اپنی متعدد تحریر اسی شہر میں لکھیں جن میں ان کا شہرۂ آفاق ناول ’وبا کے دنوں میں محبت‘ بھی شامل ہے۔

گارشیا مارکیز اپریل 2014 میں میکسیکو میں انتقال کرگئے تھے جہاں وہ گذشتہ کئی سال سے اپنے خاندان کے ساتھ مقیم تھے۔

ان کی اہلیہ مرسڈیز بارشا اور دونوں بیٹوں کا ان کی باقیات کو کارتاگینا لانے کے فیصلے کا ان کے دوستوں اور دیگر حلقوں کی جانب سے خیر مقدم کیا گیا ہے۔

گارشیا مارکیز سنہ 1984 میں کارتاگینا آئے تھے اور ایک مقامی اخبار ایل یونیورسل میں بطور صحافی ملازمت حاصل کی۔ زندگی کے آخری دنوں تک کارتاگینا میں ایک مکان ان کی ملکیت میں تھا جہاں وہ اکثر چھٹیاں گزارنے آتے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گارشیا مارکیز اور ان کی اہلیہ مرسڈیز بارشا کی سنہ 2013 میں لی گئی تصویر

’تنہائی کے سو سال‘ جیسے شہرہ آفاق ناول کے مصنف نے لاطینی زبان کے صحافیوں کی تربیت کے لیے ایک فاؤنلڈیشن بھی قائم کی تھی۔

فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر جیم ابیلو کا کہناکہ ان کی باقیات کو کارتاگینا لانے کا فیصلہ بالکل صحیح ہے۔

’کارتاگینا وہ شہر ہے جہاں گارشیا مارکیز نے اپنا واحد گھر تعمیر کیا۔ ان کے خاندان کے کئی افراد وہاں رہتے رہے اور جہاں ان کے والدین کے قبریں بھی ہیں۔‘

ابیلو کا کہنا تھا کہ ’گارشیا مارکیز اور ان کی اہلیہ نے کئی سال دیگر ممالک میں رہنے کے باوجود کولمبیا سے تعلق ختم نہیں کیا‘۔

اسی بارے میں