یہ ہیں بالی وڈ کے ’استاد‘

Image caption فلم ماسٹر جی میں راجیش کھنہ نے ایک رومانٹک استاد کا کردار ادا کیا

بھارت میں پانچ ستمبر کو یومِ اساتذہ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ ایک مہذب معاشرے میں اساتذہ کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جاسکتا اور اس کی جھلک بالی وڈ میں بھی نظر آتی ہے۔

اس موقعے پر بی بی سی کی مدھو پال نے چند فلموں پر نظر ڈالی ہے جس میں اساتذہ کو اہم کردار میں پیش کیا گیا ہے۔

بالی وڈ کی فلموں میں اساتذہ کو وقت کے بدلتے مزاج کے تحت پیش کرنے کی کوشش نظر آتی ہے خواہ وہ سنہ 1954 کی فلم ’جاگریتی‘ کے استاد ابھی بھٹاچاریہ ہوں یا پھر ’پڑوسن‘ فلم کے میوزیک ٹیچر محمود ہوں یا پھر فلم’ شاگرد‘ کے استاد آئی ایس جوہر ہوں۔

Image caption فلم بلیک میں پہلے امیتابھ بچن پھر رانی مکھر جی نے استاد کا کردار نبھایا

فلم ’تھری ایڈیٹس‘ کے وائرس بومن ایرانی ہوں یا ’مسٹر 420‘ کی نرگس یا ’میں ہوں نا‘ کی گلیمرس ٹیچر سشمیتا سین، بالی وڈ کی فلموں میں اساتذہ کو ہر زمانے کے لحاظ سے پیش کیا گيا ہے۔

سنہ 1960 کی دہائی میں معروف اداکار دلیپ کمار نے ایک اصلاح پسند استاد کا کردار نبھایا۔ انھوں نے سنہ 1964 میں ریلیز ہونے والی فلم ’لیڈر‘ میں ایک ایسے استاد کا کردار ادا کیا جو اپنے والدین کی مرضی کے خلاف اپنے طالب علموں کی مدد کرتا ہے۔

یہ کردار آج بھی ایک اصول پسند استاد کا چہرہ ہے۔ یا پھر ان کی فلم ’گنگا جمنا‘ کا گیت ’انصاف کی ڈگر پر بچو دکھاؤ چل کے‘ بھی اس کی مثال ہے۔

Image caption فلم محبتیں میں شاہ رخ خان اور امیتابھ بچن دو نسل کے اساتذہ کی نمائندگی کرتے ہیں

سات فلم فیئر ایوارڈ حاصل کرنے والی فلم ’دوستی‘ میں بھی استاد اور شاگرد کے رشتے کو بخوبی پیش کیا گیا ہے۔

سنہ 1970 کی دہائی میں میوزک ٹیچرز کا دور آتا ہے جو فلم ’گول مال‘ (1979) میں امول پالیكر اور ’پریچے‘ (1972) میں جيتیندر نے بخوبی نبھایا۔

جہاں فلم ’گول مال‘ میں امول پالیكر اپنی نوکری بچانے کے لیے اتپل دت کی بیٹی کو موسیقی سکھاتے ہیں، وہیں جيتیندر ’آل سبجیکٹ‘ استاد ہوتے ہیں لیکن سنہ 80 کی دہائی میں بالی وڈ میں رومانٹک اساتذہ کا دور نظر آتا ہے اور اس کی ابتدا فلم ’ماسٹر جی‘ (1985) سے ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ UTV
Image caption فلم پریچے میں جیتیندر کا کردار پرانے زمانے کے اتالیق کا ہے جو تعلیم اور تربیت دونوں کا ذمہ دار ہوتا ہے

اس فلم میں راجیش کھنہ نے ایک انتہائی محبت کرنے والے شوہر اور ایماندار استاد کا کردار ادا کیا تھا۔

فلم میں راجیش کھنہ کی گرل فرینڈ اداکارہ سری دیوی بنی تھیں اور یہ فلم ایک رومانٹک کامیڈی تھی جو بہت پسند کی گئی۔

اس فہرست میں رشیکیش مکھرجی کی فلم ’چپکے چپکے‘ کے دھرمیندر اور امیتابھ کا نام بھی لیا جا سکتا ہے۔

سنہ 1990 کی دہائی می ماڈرن ٹیچرز کا دور آتا ہے جہاں انیل کپور کو فلم ’انداز‘ (1994) میں استاد کے روپ میں دیکھا جا سکتا ہے اور کرشمہ کپور کو اپنے ہی استاد سے پیار ہو جاتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ aamir khan
Image caption فلم تارے زمیں پر میں عامر خان نے ایک مثالی استاد کا کردار ادا کیا

سنہ 1993 میں آنے والی فلم سر‘ میں نصیر الدین شاہ نے بھی ایک ایسے ہی استاد کا کردار ادا کیا جو اپنے طالب علموں کو محبت کاسبق سکھانے میں کامیاب ہوتے ہیں۔

سنہ 2000 میں فلم ’محبتیں‘ میں شاہ رخ خان، پرنسپل امیتابھ کے اصولوں کے خلاف انقلابی کردار میں نظر آتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ spice
Image caption تھری ایڈیٹس میں بومن ایرانی کا کردار بھی یادگار تصور کیا جاتا ہے

اس کے علاوہ فلم ’بلیک‘ کا دل چھونے والا استاد، فلم ’تارے زمین پر‘ کا نظام کو چیلنج دینے والا استاد بھی اسی صف میں شامل ہے۔

ویسے استاد کے طور پر سب سے زیادہ فلم کرنے والوں میں امیتابھ بچن سر فہرست نظر آتے ہیں۔ انھیں فلم ’چپکے چپکے‘، ’محبتیں‘، ’بلیک‘، ’دو اور دو پانچ‘، ’قسمیں وعدے‘، اور ’آرکشن‘ جیسی فلموں میں استاد کے مختلف انداز میں دیکھا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں