جنوبی انڈیا کی فلموں کی مشہور اداکارہ انتقال کر گئیں

مانوراما
Image caption مانوراما نے تمل فلم انڈسٹری میں ایک لمبا عرصہ گزارا ہے

جنوبی بھارت کی معروف اداکارہ مانوراما کے رشتہ داروں کے مطابق وہ 76 سال کی عمر میں چنئی میں حرکت قلب بند ہوجانے کی وجہ سے انتقال کرگئیں ہیں۔

ان کے رشتہ داروں کا کہنا ہے کہ وہ کافی عرصے سے بیمار تھیں۔

گوپی شانتھا جو مانوراما کے فلمی نام سے مشہور تھیں ایک اعلیٰ درجے کی فنکارہ تھیں جن کو فلم اور سٹیج اداکاری کے علاوہ گلوکاری پر بھی عبور حاصل تھا۔

حالانکہ ان کی وجہ شہرت تمل فلمیں ہی تھیں لیکن انھوں نے جنوبی ہندوستان کی کئی دوسری اور ہندی زبان کی فلموں میں بھی کام کیا۔

تمل میڈیا کے مطابق مانوراما نے اپنے چھ دہائیو پر محیط کریئر میں سو سے زیادہ فلموں میں کام کیا۔

بی بی سی تمل کے فن و ثقافت کے نامہ نگار سمپتھ کمار کا کہنا ہے کہ ’وہ ایک لیجنڈری اداکارہ تھیں جو ہر طرح کا کردار ادا کر سکتی تھیں۔ انھیں تمل زبان کی مختلف بولیوں پر مکمل عبور حاصل تھا۔‘

مانوراما نے زیادہ تر فلموں میں کامیڈی رول کیے لیکن اپنے کریئر کے آخری دور میں انھوں نے علامتی کردار بھی ادا کیے۔

مانوراما کا ایک اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ’لوگوں کو رلانا آسان ہے، لیکن ان کو ہنسانا سب سے مشکل کام ہے۔‘

انھوں نے 12 سال کی عمر میں سٹیج سے اداکاری کا آغاز کیا اور سو سے زیادہ سٹیج ڈراموں میں کام کیا۔

Image caption مانوراما نے تمل کے علاوہ جنوبی ہندوستان کی دوسری زبانوں کی فلموں میں بھی کام کیا

انھیں فلموں میں کام کرنے کا پہلا موقع سنہ 1958 میں بننے والی تمل فلم ’ملائی ییتا منگائی‘ میں ملا۔

انھوں نے اپنے وقت کے جن صف اول کے ادکاروں اور سکرپٹ رائٹرز کے ساتھ کام کیا ان میں سے پانچ بعد میں تمل ناڈو اور آندھرا پردیش کی ریاستوں کے وزیر اعلیٰ بنے۔

مانوراما کا شمار ان چند خواتین اداکاراؤں میں ہوتا ہے جنھوں نے تمل فلم انڈسٹری میں لمبے عرصے تک ایک کامیاب کیریئر گزارا۔

مانوراما نے ایک بار بی بی سی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’اگر میں فلموں میں صرف ہیروئن آنے کے بارے میں سوچتی تو میں بہت پہلے ہی منظر سے غائب ہوچکی ہوتی لیکن میں نے کامیڈی کرداروں میں آنے کا فیصلہ کیا اور اسی لیے انڈسٹری میں تقریبا پانچ دہائیوں تک کام کرتی رہی۔‘

مانوراما نے کئی ایوارڈز بھی جیتے جن میں سنہ 1989 میں دیا جانے والا بہترین معاون اداکارہ کا بھارتی قومی ایوارڈ بھی شامل ہے۔

گوپی شانتھا یعنی مانوراما بھارت کی جنوبی ریاست تمل ناڈو میں انتہائی مقبول ہیں اور وہاں ایک ثقافتی ورثہ سمجھی جاتی ہیں۔

اسی بارے میں