اڈیل کا البم نئی تاریخ رقم کرنے کو تیار

تصویر کے کاپی رائٹ XL Recordings
Image caption اڈیل کے اس سے قبل ریلیز ہونے والے دونوں البم میوزک چارٹس پہ پہلے نمبر پر رہے ہیں

برطانوی گلوکارہ اڈیل کا نیا البم ’25‘ تین دن میں پانچ لاکھ کاپیاں فروخت کرنے کے بعد برطانیہ کا سب سے زیادہ تیزی سے بکنے والا البم بن سکتا ہے۔

سب سے زیادہ فروخت ہونے کی فہرست یا ’چارٹس‘ میں آنے کے لیے کسی بھی گلوکار کے پاس سات دن کا وقت ہوتا ہے جس میں گلوکار کے نئے البم کی کاپیوں کی تعداد ریکاڈ کی جاتی ہے۔ ’25‘ کی تین دن میں پانچ لاکھ اڑتیس ہزار کاپیاں بک چکی ہیں اور ابھی اس کے پاس چار دن باقی ہیں۔

لندن سے تعلق رکھنے والی اڈیل اس سے پہلے دو البمز ریلیز کرچکی ہیں۔ ان کا پہلا البم ’نائنٹین‘ (19) تھا جو کہ سنہ 2006 میں ریلیز ہوا تھا اور اس کے بعد انھوں نے ’ٹوینٹی ون‘ (21) ریلیز کیا۔

ان کے دونوں البم میوزک چارٹس پہ پہلے نمبر پر رہے۔ ان کے گانوں اور آواز کا موازنہ مشہور برطانوی گلوکار ایمی وائن ہاؤس سے کیا جاتا ہے۔

ابھی تک برطانوی موسیقی کی تاریخ میں سات دن میں پانچ لاکھ کاپیاں فروخت کرنے والے صرف دو البم ہیں۔اس سے قبل برطانوی پاپ گروپ ٹیک دیٹ کے البم ’پروگریس‘ نے سنہ 2010 میں ایک ہفتے کے اندر پانچ لاکھ 19 ہزار کاپیاں یا البم فروخت کیے تھے، جبکہ معروف برطانوی بینڈ اوئیسز اس لحاظ سے پہلے نمبر پر ہے۔

1997 میں ریلیز ہونے والے ان کے البم ’بی ہیر ناؤ‘ کی چھ لاکھ 96 ہزار کاپیاں خریدی گئی تھیں۔

ادھر معروف ترین البمز میں اس ہفتے، اڈیل تو پہلے نمبر پر ہیں ہی، لیکن لیجینڈ گلوکار ایلوس پریسلے کا ’اف آئی کین ڈریم‘ دوبارہ نمبر دو کی پوزیشن پر آگیا ہے اور جسٹن بیبر کا ’پرپز‘ تیسرے نمبر پہ براجمان ہے۔

گلوکار اینیا کا سات سال بعد پہلا البم ’ڈارک سکائی آئلینڈ‘ چوتھے نمبر پر اور ون ڈائریکشن کا ’میڈ ان اے ایم‘ پانچویں پوزیشن پر ہے۔

یاد رہے کہ برطانوی نژاد پاکستانی گلوکار زین ملک ’ون ڈائریکشن‘ چھوڑ چکے ہیں۔

اسی بارے میں