’دنگل‘ سے پہلے اکھاڑہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عامر خان کے عدم رواداری کے بیان پر سخت تنقید ہوئی ہے

بالی وڈ کے ’مسٹر پرفیکشنسٹ‘ عامر خان نے اس ہفتے ایک متنازع بیان دے کر اپنی فلم دنگل سے پہلے ہی اکھاڑہ جما لیا ہے۔

شاہ رخ خان کے بعد اب عامر خان بھی عدم رواداری پر اپنے بیان کی وجہ سے خبروں اور سوشل میڈیا میں بحث کا موضوع رہے۔ جس کے نتیجے میں پولیس کو ان کے گھر اور شوٹنگ پر سخت سکیورٹی کا انتظام کرنا پڑا۔

بالی وڈ راؤنڈ اپ سننے کے لیے کلک کریں

انڈسٹری میں کچھ لوگ ان کے ساتھ آئے تو بعض نے ان کے بیان کو نا جائز قرار دیا۔ بظاہر ان کے بیان سے ناراض ہونے والوں میں سب سے آگے انوپم کھیر ہی نظر آئے۔ انڈسٹری میں چند پروڈیوسرز جیسے رام گوپال ورما اور مدھر بھنڈارکر بھی پیش پیش تھے۔

اب انوپم کھیر کی بات تو سمجھ میں آتی ہے کہ وہ بڑے ’مودی بھکت‘ کہے جاتے ہیں، ان کی بیگم بی جے پی کی رکن ہیں اور لوگوں کے خیال میں ان کی نظر راجیہ سبھا کی نشست پر بھی ہے لیکن رامو اور مدھر بھنڈاکر ڈھیر ساری فلاپ فلموں کے بعد کیا اب سیاست میں قسمت آزمانے کی کوشش میں ہیں؟

’سینسر بورڈ دورِ جاہلیت کی جانب‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption عمران ہاشمی کی آنے والی فلم اظہر میں بھی چند ایسے مناظر ہیں جن پر سینسربورڈ کی قینچی چل سکتی ہے

بالی وڈ میں ’سیریل کسر‘ کے نام سے مشہور اداکار عمران ہاشمی کا کہنا ہے کہ سینسر بورڈ ہمیں دورِ جاہلیت کی جانب لے جا رہا ہے۔

اپنی نئی فلم’میں رہوں نہ رہوں‘ کے لانچ کے موقعے پر عمران نے کہا کہ مارکیٹ میں انٹرنیشنل سنیما ہے، ہالی وڈ ہے اور ایسے میں سینسر بورڈ کے فیصلے انڈسٹری کے لیے نقصان دہ ثابت ہوں گے۔

عمران کا کہنا ہے کہ فلم کو سینسر کرنے کے بجائے اسے اے سرٹیفکٹ دیا جا سکتا ہے۔ عمران کی پریشانی کا سبب تو آپ سمجھ ہی گئے ہوں گے اب ان کی نئی فلم ’اظہر‘ میں بھی کسنگ سینز ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ کہیں سینسر بورڈ ان پر اعتراض نہ کر بیٹھے۔

شیر کے منھ میں ہاتھ ڈالنے کا نتیجہ

Image caption وویک اوبرائے نے وقت کے ساتھ چیزیں سیکھ لی ہیں

بالی وڈ میں جہاں دوستیاں مشہور ہیں وہیں دشمنیوں کی بھی بے شمار مثالیں موجود ہیں اور ان میں سب مشہور دشمنی سلمان خان اور وویک اوبرائے کی ہے اور اس کی وجہ ایشوریہ رائے بچن ہیں۔

خیر جہاں وویک سلمان سے معافی تلافی کرتے آئے ہیں وہیں سلمان انھیں ہمیشہ نظر انداز کرتے آئے ہیں۔

اب تازہ خبر ہے کہ حال ہی میں سلمان فلم ’پریم رتن دھن پایو‘ کے پروموشن کے دوران محبوب سٹوڈیو گئے جہاں ’بجرنگی بھائی جان‘ کے ڈائریکٹر اندر کمار سے ملنے ان کی وینٹی وین میں داخل ہوتے ہی الٹے پاؤں واپس نکل آئے۔

معلوم ہوا کہ اس وین میں وویک اوبرائے موجود تھے جو فلم ’گرینڈ مستی‘ کی شوٹنگ کے سلسلے میں وہاں موجود تھے ۔

موقعے کی نزاکت کو سمجھتے ہوئے ٹیم کا پورا عملہ سلمان سے ملنے وین سے باہر آیا لیکن وویک نے وین میں ہی بیٹھے رہنے میں اپنی عافیت سمجھی کیونکہ ماضی کے تجربے سے وہ سمجھ چکے ہیں کہ جنگل میں شیر کے منھ میں ہاتھ ڈالنے کا کیا نتیجہ ہوتا ہے؟

سنجے کے کردار کے لیے رنبیر مناسب؟

تصویر کے کاپی رائٹ Mohanlal churiwala
Image caption سنجے دت کا کردار نشیب و فراز سے پر ہے

فلمساز راج کمار ہیرانی سنجے دت کی زندگی پر فلم بنانے کی ٹھان چکے ہیں۔ اب اگر تلاش ہے تو اس اداکار کی جو سنجے کے اس کردار کو نبھا سکے۔

خیال رہے کہ سنجے دت غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے جرم میں اس وقت جیل میں سزا کاٹ رہے ہیں۔

ہیرانی کے مطابق سنجے دت کی زندگی کی کہانی بہت دلچسپ اور اتار چڑھاؤ سے بھر پور ہے اور ان کے خیال میں رنبیر اس کردار کے لیے مناسب ہیں کیونکہ وہ سنجے دت کو بھی بہت قریب سے جانتے ہیں۔ اب دیکھتے ہیں کہ راجو اپنی اس فلم میں سنجے کی زندگی کے حقائق کس حد تک اور کتنی سچائی سے پیش کر پائیں گے۔

’شاندار‘ کو مسترد کیوں کیا گيا؟

Image caption شاہد کپور اور عالیہ بھٹ کی جوڑی اپنا جوہر نہ دکھا سکی

فلمساز وکاس بہل کا کہنا ہے کہ وہ اپنی فلم ’شاندار ‘ کی ناکامی کے بعد اب اپنے نئے پروجیکٹ پر مزید محنت سے کام کرنا چاہتے ہیں۔

وکاس یہ سوچ کر پریشان ہیں کہ آخر ان سے غلطی کہاں ہوئی اور لوگوں نے اتنی بری طرح فلم کو مسترد کیوں کر دیا؟

ویسے وکاس کو چاہیے کہ وہ پریشان ہونے کے بجائے ان لوگوں کا ردِ عمل جاننے کی کوشش کریں جو اتنا مہنگا ٹکٹ لینے کے بعد فلم درمیان میں ہی چھوڑ کر چلے گئے تھے۔

اور ہاں اگر آپ نے اپنی غلطیوں سے ہی سیکھا ہوتا تو بطور پروڈیوسر آپ کی فلم ’بامبے ویلویٹ‘ کی ناکامی کافی نہیں تھی۔ وکاس صاحب لوگ کتنی بار آپ کو موقع دیں گے؟

اسی بارے میں