لومڑی کی کہانی نے بہترین ناول پیچھے چھوڑ دیے

تصویر کے کاپی رائٹ Penguin
Image caption ایک ڈیزائنر سے مصنفہ بنے والی بکفورڈ نے اپنے کام سے کتاب لکھنے اور ترتیب دینے کے لیے چھ ماہ کی چھٹی لی

دوستی اور جدائی پر مبنی افسانے نے سب سے زیادہ فروخت ہونے والے ناول ’دی گرل آن دی ٹرین‘ اور ’گو سیٹ آ واچ مین‘ کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور اسے واٹر سٹونز بک آف دی ائیر کا اعزاز ملنے کا امکان ہے۔

دی فاکس اینڈ دی سٹار نامی ناول جسے کوریلی بکفورڈ سمتھ نے لکھا ہے جو ایک لومڑی کے بارے میں ہے جو جنگل میں اپنے واحد دوست ستارے کو آسمان میں کھو دیتی ہے۔

بکفورڈ سمتھ جو پینگوئن نامی کمپنی میں ڈیزائنر کا کام کرتی ہیں کا کہنا ہے کہ ’اس اعزاز کو جیتنے پر میں کافی جذباتی اور فخر محسوس کر رہی ہوں۔‘

ان کا کہنا ہے کہ ’یہ ناقابل یقین ہے اور یہ بالکل حقیقت نہیں لگ رہا۔‘

ایک ڈیزائنر سے مصنفہ بنے والی بکفورڈ نے اپنے کام سے کتاب لکھنے اور ترتیب دینے کے لیے چھ ماہ کی چھٹی لی۔

انھوں نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ وہ ’اس کتاب کو بچوں کے لیے لکھنا چاہتی تھیں لیکن یہ کتاب نوجوانوں کے لیے بھی ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Penguin

’یہ محبت، جدائی اور تبدیلیوں سے سیکھنے کے بارے میں ہے۔ہر نقصان سخت ہوتا ہے۔ میں نے اپنی والدہ کو کھو دیا جب میں یونیورسٹی میں تھی۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’فن جادوئی اور پر اسرار ہونا چاہیے اور میں چاہتی ہوں کہ لوگ اس میں اپنے جذبات شامل کریں۔‘

دی فاکس اینڈ دی سٹار نے شارٹ لسٹ ہونے والی کتابوں میں پاؤلا ہاکنز کی کتاب دی گرل آن دی ٹرین، ہارپر لی کی گو سیٹ آ واچ مین اور میری بئیرڈز کی ایس پی کیو آر کو پیچھے چھوڑا ہے۔

ان کتابوں کی فہرست کتاب فروش برطانوی کمپنی واٹر سٹونز کی جانب سے نامزد کی جانے والی کتابوں میں سے بنائی گئی ہے۔

اسی بارے میں