’سوشل میڈیا برا ہے تو جاتے ہی کیوں ہو؟‘

Image caption ’وزیر میرے کریئر کی واحد فلم ہے جہاں مجھے مار کھانے کی جگہ مارنے کا موقع ملا ہے‘

بھارت میں جاری عدم برداشت کی بحث کے درمیان سوشل میڈیا پر منفی ردعمل اور فلمی ستاروں کے ساتھ گالی گلوچ سے بالی وڈ کے بڑے بڑے فنکار پریشان ہوئے ہیں۔

اس بحث کے دوران جہاں مداحوں کی رائے پر سوال اٹھے ہیں، وہیں بعض فلمی ستاروں نے سوشل میڈیا چھوڑنے کی دھمکی تک دے ڈالی ہے۔ کچھ تو واقعی سوشل میڈیا کو خیرباد کہہ چکے ہیں۔

لیکن معروف اداکار اور ہدایت کار فرحان اختر کی سوچ تھوڑی مختلف ہے۔

فلم ’وزیر‘ کی تشہیر کے موقعے پر بات کرتے ہوئے فرحان اختر نے سوال کیا کہ جو لوگ سوشل نیٹ ورکنگ کو اتنا برا بھلا کہتے ہیں وہ وہاں جاتے ہی کیوں ہیں؟

فرحان نے کہا ’کچھ آرٹسٹ اکثر کہتے رہتے ہیں کہ سوشل میڈیا پر لوگ اکثر حدیں پار کر دیتے ہیں۔ لیکن یہ تو سب کو معلوم ہے کہ سوشل نیٹ ورکنگ کی دنیا اچھی بھی ہے اور بری بھی۔ اور اس کے لیے آپ کو ذہنی طور پر تیار رہنا ہوگا۔‘

Image caption فرحان مزاحیہ انداز میں کہتے ہیں کہ اگر آپ لوگوں کے دیے ہوئے سارے ردعمل پڑھتے ہیں تو مجھے لگتا ہے آپ کے پاس بہت وقت ہے

فرحان کے مطابق ’آپ سوشل میڈیا پر یہ فیصلہ نہیں کر سکتے کہ جو میں کہنا چاہوں، لوگ وہی پڑھیں اور اس پر اپنی رائے نہ دیں۔‘

وہ کہتے ہیں: ’لوگ کئی بار کچھ ایسا لکھ دیتے ہیں جس سے تکلیف ہوتی ہے لیکن سوشل میڈیا کا اصول ہے، اگر آپ یہاں آئے ہیں تو برداشت بھی کیجیے جناب۔‘

فرحان مزاحیہ انداز میں کہتے ہیں کہ اگر آپ لوگوں کا دیا ہوا سارا ردِعمل پڑھتے ہیں تو مجھے لگتا ہے آپ کے پاس بہت وقت ہے۔

فرحان نے ’وزیر‘ میں امیتابھ بچن کے ساتھ ایک پولیس افسر کا اہم کردار ادا کیا ہے۔

اس فلم کے بارے میں فرحان نے بتایا کہ یہ ’فلم میرے لیے انتہائی خاص ہیں۔ میرے کریئر کی یہی واحد فلم ہے جہاں مجھے مار کھانے کی جگہ مارنے کا موقع ملا ہے۔‘

فرحان کہتے ہیں: ’اس سے پہلے میں نے مسلسل تین یا چار فلمیں ایسی کیں جس میں مجھے بہت مار پڑی۔ جیسے فلم ’راک آن‘ میں نے تھپڑ کھائے ’زندگی نہ ملے گی دوبارہ‘ میں تھپّڑ کھائے، اور ’کارتک کالنگ کارتک‘ میں تو رام کپور نے مجھے اٹھا اٹھا کر پٹکا۔

یہ فلم اگلے ماہ آٹھ جنوری کو ریلیز ہو رہی ہے اور اس کے پروڈیوسر ودھو ونود چوپڑا اور راج کمار ہیرانی ہیں۔

اسی بارے میں