لیونارڈو ڈی کیپریو کے بارے میں پانچ حقائق

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

ہالی وڈ میں دو دہائیوں سے زیادہ عرصے سے کام کرنے کے بعد اداکار لیونارڈو ڈی کیپریو نے اپنا پہلا آسکر ایوارڈ حاصل کر لیا ہے۔

اس سے پہلی انھیں آسکر ایوارڈ کے لیے پانچ مرتبہ نامزد کیا گیا تھا لیکن انھوں نے آسکر کبھی نہیں جیتا۔

یہ ہیں اِس مشہور اداکار کے بارے میں پانچ حقائق۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

لیو نارڈو نے سب سے پہلے ’روزان‘ اور ’نیو لاسی‘ جیسے چھوٹے ٹی وی ڈراموں میں کام کیا۔

لیکن سنہ 1991 میں ریلیز ہونی والی ان کی پہلی فلم ’کرٹرز تھری‘ خلائی مخلوق پر مبنی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Paramount Pictures

سنہ 1997 میں لیونارڈو ڈی کیپریو نے اداکارہ کیٹ ونسلیٹ کے ساتھ مقبول ترین فلم ’ٹائٹانک‘ میں کام کیا جس نے باکس افس کے ریکارڈ توڑ دیے۔

لاائٹانک دنیا کی دوسری سب سے کامیاب ترین فلم قرار دی گئی ہے۔ فلم نے دو اعشاریہ 10 بلین ڈالر کمائےجس کے بعد فلم ’اواتار‘ نے دو اعشاریہ سات بلین ڈالر کی آمدنی کر کے ٹائٹانک کا ریکارڈ توڑ دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Paramount Pictures

لیونارڈو ڈی کیپریو کو اب تک پانچ آسکار ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔

سب سے پہلے انھیں اپنی فلم ’واٹس ایٹنگ گلبرٹ گریپ‘ میں کام کرنے پر ’بیسٹ سپورٹنگ ایکٹر‘ یعنی بہترین معاون اداکار کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

اس کے علاوہ انھیں اپنی فلمیں ’ایویئٹر‘، ’بلڈ ڈائمنڈ‘ اور ’وولف آف وال سٹریٹ‘ کے لیے بھی بہترین اداکاری کے آسکر ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا تھا۔

سنہ 2016 میں انھوں نے اپنی فلم ’دا روننٹ‘ میں بہترین کارکردگی کرنے کے بعد آخر کار آسکار ایوارڈ حاصل کر لیا۔

لیونارڈو نے آسکر ایوارڈ قبول کرنے کے بعد اپنے خطاب میں کہا کہ ’ماحولیاتی تبدیلی اصل ہے اور ابھی ہو رہی ہے۔ یہ انسانوں کے لیے لاحق سب سے بڑا خطرہ ہے اور ہمیں اس سے نمٹنے کے لیے متحد ہونا پڑے گا۔‘

لیونارڈو ڈی کیپریو کو سنہ 2014 میں ماحولیاتی تبدیلی کے حوالے سے اقوام متحدہ کے نمائندے کے طور پر مقرر کیا گیا تھا اور وہ ہمیشہ سے اس موضوع کے بارے میں کھل کر بات کرتے رہے ہیں۔

لیونارڈو نے سنہ 2007 میں ایک دستاویزی فلم ’ایلیونتھ آور‘ بھی بنائی تھی جس میں عالمی ماحول کی حالت کا جائزہ لیا گیا تھا۔

اس کے علاوہ مشہور اداکار نے ماحولیاتی تنظیموں کو 95 لاکھ پاؤنڈ عطیہ کیے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ویب سائٹ ’آئی ایم ڈی بی‘ کے مطابق لیونارڈو نے ’گولڈن گلوب‘ اور ’بافٹاز‘ سمیت 70 انعام حاصل کیے ہیں۔

اس سال کے بافٹاز کی تقریب میں لیونارڈو نے اپنی قبولیت کی تقریر میں اپنی والدہ ارمیلن انڈنبرکن کو خراج تحسین پیش کیا۔

انھوں نے کہا ’میں مشرقی لاس انجیلس میں ایک بہت ہی خطرناک محلے میں بڑا ہوا اور یہ عورت مجھے ایک اچھے سکول میں بھیجنے کے لیے روزانہ گاڑی پر تین گھنٹوں کا سفر کرتی تھی۔ آج میری والدہ کی سالگرہ ہے۔ میں اپنی ماہ سے بہت محبت کرتا ہوں۔‘

اسی بارے میں