میں شادیوں میں نہیں ناچتا: جان ابراہم

Image caption جان کہتے ہیں غیروں کی شادی میں پیسے لے کر ناچنا میرے لیے شرمندگی کی بات ہے

بالی ووڈ اداکار اور پروڈیوسر جان ابراہم ایک بار پھر ایکشن ہیرو کے طور پر واپسی آئے ہیں کیونکہ ان کی نئی فلم ’راکی ہینڈسم‘ میں زبردست ایکشن ہے۔

جان کچھ سالوں سے نہ تو کسی ایوارڈ تقریب میں نظر آئے ہیں اور نہ ہی کسی فلمی پارٹی میں۔

صرف اپنی فلموں کی پروموشن کے دوران نظر آنے والے جان ابراہم کہتے ہیں، ’نہ تو مجھے ایواڈز پروگرام میں دلچسپی ہے اور نہ ہی کسی کی شادی میں پیسے لے کر ناچنے میں‘

وہ مزید کہتے ہیں، ’میں نے اپنی زندگی میں کچھ اصول بنائیں ہیں، جن میں سختی سے عمل کرتا ہوں اور شادیوں، پارٹیوں میں نہ ناچنا ان میں سے ایک ہے۔‘

جان کہتے ہیں، ’غیروں کی شادی میں پیسے لے کر ناچنا میرے لیے شرمندگي کی بات ہے۔ اگرچہ کچھ اداکار اسے آرٹسٹ کا کام کہہ کر صحیح قرار دیتے ہیں، لیکن میں ایسا کر کے اپنی راتوں کی نیند سے محروم نہیں ہونا چاہتا۔‘

جہاں تک ایواڈز کی بات ہے تو ان کا کہنا ہے کہ ’یہ ایوارڈز اب قابل اعتماد نہیں رہے‘۔

Image caption جان کہتے ہیں، ’آج کل کے ایواڈز پروگرام صرف ٹیلی ویژن کے سیریل ہیں جہاں صرف ناچ گانا ہی ہوتا ہے

جان کہتے ہیں، ’آج کل کے ایواڈز پروگرام صرف ٹیلی ویژن کے سیریل ہیں جہاں صرف ناچ گانا ہی ہوتا ہے۔ ہمارے یہاں دس دس ایواڈز ہوتے ہیں، لیکن کسی ایک پر بھی بھروسہ نہیں کر سکتے۔‘

جان کی پچھلی فلم ’ویلكم بیک‘ سال 2015 میں ریلیز ہوئی تھی اور اس سے پہلے وہ دو سال تک کسی فلم میں نظر نہیں آئے تھے۔

اس طویل وقفے کے بارے میں وہ کہتے ہیں، ’میں زیادہ فلمیں نہیں، بہترین فلمیں کرنا چاہتا ہوں۔ ویلكم بیک سے پہلے میں نے مدراس کیفے کو بھی پورے سات سال دیے تھے۔ تب کئی لوگوں نے مجھ سے کہا کہ تم بیوقوفی کر رہے ہو، لیکن اسی فلم کو 2 نیشنل ایواڈز ملےآ اس لیے میں اچھی فلموں کے ساتھ ہی اپنا نام شامل کرنا چاہتا ہوں۔‘

جان ان کی اگلی فلم ’راکی ہینڈسم‘ کے پروڈیوسر بھی ہیں اور لیڈ رول میں بھی، ان کی پچھلی فلموں میں اگر سال 2013 کی فلم ’مدراس کیفے‘ کو چھوڑ دیں تو وہ مسلسل فلاپ ہو رہے تھے۔ ایسے میں ’راکی ہینڈسم‘ میں جان کا کافی کچھ داؤ پر لگا ہے۔

اسی بارے میں