چینّئی میں مائیکل جیکسن کا مجسمہ

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption دس فٹ اونچے اس مجسمے کو مائیکل جیکسن کے ایک پرستار چندرشیکھرن نے گرینائٹ کے ایک بڑے پتھر سے تراش کروایا ہے

انڈیا کی جنوبی ریاست تمل ناڈو کے دارالحکومت چینّئی میں امریکہ کے معروف پاپ سٹار مائیکل جیکسن کا ایک مجسمہ نصب کیا گیا ہے۔

دس فٹ اونچے اس مجسمے کو مائیکل جیکسن کے ایک پرستار چندرشیکھرن نے گرینائٹ کے ایک بڑے پتھر سے تراش کروایا ہے۔

چندر شیکھرن کا کہنا ہے کہ ان کی کوشش تو یہ تھی کہ یہ مجسمہ وہ جیکسن کے اہل خانہ کو بطور تحفہ پیش کر سکیں اور اسے نیور لینڈ رینچ میں نصب کیا جائے لیکن وہ ایسا کرنے میں ناکام رہے۔

بی بی سی اس بات کی تصدیق تو نہیں کر سکا کہ آیا مائیکل جیکسن کی فیملی چندرشیکھرن کی پیش کش کا کوئی جواب دیا بھی تھا یا نہیں۔

اس مجسمے کا افتتاح شہر کی ویلز یونیورسٹی میں معروف فلمی اداکار اور رقاص پربھو دیوا نے کیا جو خود بھی مائیکل جیکسن کے بڑے مداح ہیں اور وہ اپنے رقص کے لیے کافی مشہور ہیں۔

چندر شیکھرن نے بی بی کو بتایا کہ پتھر کے ایک ٹکڑے سے تقریبا ساڑھے تین ٹن وزنی اس مجسمے کو تیار کرنے میں چھ مجسمہ سازوں کو تقریبا 45 روز لگے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس کام میں شامل مجمسہ ساز مستقل مائیکل جیکسن کے میوزک البم، ان کے رقص کے ویڈیوز اور فوٹو گراف دیکھتے رہے تاکہ ان کی شبیہہ کو اس میں اچھی طرح سے اتارا جا سکے۔

اسی بارے میں