’سلمان جو کرتے ہیں وہ ٹرینڈ بن جاتا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سلمان کے ‏عامر پہلے بھی معترف رہے ہیں

عید آنے والی ہے اور عید کے ساتھ آ رہے ہیں ’سلطان‘ یعنی سلمان خان۔

سلمان خان کی فلم ’سلطان ‘ کے نئے پوسٹرز جاری کیے گئے ہیں جو کہ عید کے موقعے پر ریلیز ہونے والی ہے۔ ویسے تو انڈسٹری کے ’دبنگ‘ خان کے بے شمار مداح ہیں لیکن میں یہاں ان کے ایک خاص مداح کا ذکر کروں گی اور وہ ہیں عامر خان۔

بالی وڈ راؤنڈ اپ سننے کے لیے کلک کریں

عامر خان بھی جلد ہی فلم ’دنگل‘ میں ایک پہلوان کے کردار میں نظر آنے والے ہیں۔ اب چونکہ ’سلطان‘ میں سلمان بھی ہریانہ کے ایک مشہور پہلوان ’سلطان خان‘کا کردار نبھا رہے ہیں تو دونوں کا موازنہ تو بنتا ہے پھر کیا تھا میڈیا نے دونوں خانوں کو اکھاڑے میں لاکھڑا کیا اور عامر خان سے سلمان خان اور ان کے کسرتی بدن پر سوال پوچھنے شروع کر دیے۔

عامر کہاں ہاتھ آنے والے تھے۔ عامر کا کہنا تھا ’سلمان اچھی صورت ہی نہیں بلکہ ایک خوبصورت شخصیت کے مالک ہیں اور میں اور میری بیوی کرن دونوں ہی سلمان کے بہت بڑے فین ہیں۔ میں کبھی باڈی بلڈنگ میں سلمان کا مقابلہ نہیں کر سکتے کیونکہ سلمان جو کرتے ہیں وہ ایک ٹرینڈ بن جاتا ہے۔‘

سلمان اور وویک

Image caption وویک نے سلمان کی فلم سلطان کی خوب تعریف کی ہے

ویسے کہا جاتا ہے کہ سلمان کی شخصیت کا ایک اور پہلو بھی ہے کہ جب وہ ایک بار کمٹمنٹ کر دیتے ہیں تو پھر اپنے آپ کی بھی نہیں سنتے اور ایسا ہی ایک کمٹمنٹ انھوں نے وویک اوبرائے کو معاف نہ کرنے کا کیا ہے اور وویک نے بھی بار بار معافی مانگنے کی ٹھان رکھی ہے ہاں یہ بات اور ہے کہ اس کے انداز الگ الگ ہیں۔

وویک کو جب بھی موقع ملتا ہے وہ سلمان خان کو خوش کرنے کا موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے۔ حال ہی میں وویک نے سلمان کی فلم ’سلطان‘ کی خوب تعریف کی۔ وویک کا کہنا ہے کہ سلمان جیسے بڑے سٹار ’بایو پکس‘ اور مختلف رولز کے ساتھ جو تجربے کرتے ہیں وہ بہت اچھی بات ہے اور ’سلطان‘ بہت ہی زبردست فلم ہوگی۔

لگے رہو وویک بھائی شاید کسی دن سلو بھائی کا دل پگھل جائے۔

سکندر کھیر کی کوشش اور قسمت

تصویر کے کاپی رائٹ Walkwater Media
Image caption سکندر کھیر انوپم کھیر کے اپنے بیٹے نہیں ہیں

اداکار انوپم کھیر اور کرن کھیر کے صاحبزادے سکندر کھیر نے یوں تو سنہ 2008 میں فلم ’وڈ سٹاک وِلا‘ سے اپنے فلمی کریئر کی ابتدا کی تھی لیکن فلم ’تیرے بِن لادن ٹو‘ کے بعد لوگ انھیں پہچاننے لگے۔

یوں تو انوپم کھیر ان کے سگے والد نہیں ہیں لیکن سکندر انوپم سے بہت قریب اور متاثر ہیں۔ وہ کافی عرصے سے اپنے پاپا انوپم کے نقش قدم پر چلنے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن بقول ان کے قسمت ان کا ساتھ نہیں دے رہی۔

اب سکندر کا کہنا ہے کہ چونکہ وہ انوپم اور کرن کھیر جیسے بڑے سٹار کے بیٹے ہیں تو لوگ ان کا موازنہ ان کے والدین سے کریں گے لیکن ان پر اس کے لیے بالکل بھی دباؤ نہیں ہے۔

34 سالہ سکندر کا کہنا ہے کہ یہ درست ہے کہ آپ کو زندگی میں طے شدہ معیار پر پورا اترنا ہوتا ہے لیکن زندگی کو انجوائے کرنا بھی تو ضروری ہے۔

اب کوئی سکندر صاحب سے پوچھے کہ بھائی 34 سال سے آپ انجوائے ہی تو کر رہے تھے اور خدارا اپنے والدین کے ساتھ اپنے موازنے کی بات نہ ہی کریں تو اچھا ہے لوگ ہنسیں گے کیونکہ انوپم اور کرن انڈسٹری میں بہت ہی مشقت اور ایمانداری کے ساتھ اس مقام تک پہنچے ہیں آپ ابھی صرف کام تلاش کریں۔

’اڑتا پنجاب‘ کو صرف ایک قینچی لگی

تصویر کے کاپی رائٹ parul gosain
Image caption اڑتا پنجاب میں شاہد کپور اور عالیہ بھٹ لیڈ رول میں ہیں

پچھلا ہفتہ فلم ’اڑتا پنجاب‘ کی ٹیم اور سینسر بورڈ کے درمیان قانونی لڑائی کے بعد آخر کار فلم صرف ایک کٹ کے بعد ریلیز ہوگئی اسی دوران فلم کے آن لائن لیک ہونے کی خبریں بھی گردش کرتی رہیں۔

فلم کے پروڈیوسر انوراگ کشیپ نے بالواسطہ طور پر اس معاملے میں سینسر بورڈ کی جانب اشارہ کرنے کی کوشش کی لیکن سینسر بورڈ کے سربراہ پہلاج نہلانی نے اس کی سختی سے تردید کی۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ اس تمام تماشے کے بعد پہلاج نہلانی نے فلم کی ریلیز کے موقعے پر ’اڑتا پنجاب‘ کی پوری ٹیم کو مبارک باد اور نیک خواہشات پیش کیں اسے کہتے ہیں کہ ’انت بھلا تو سب بھلا‘۔

اسی بارے میں