’دی ڈیئر ہنٹر‘ کے ہدایتکار مائیکل چیمینو چل بسے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption سنہ 1978 میں ویت نام پر بنائی گئی فلم ’دی ڈیئر ہنٹر‘ ان کی وجہ شہرت تھی

اکیڈمی انعام یافتہ امریکی ہدایت کار مائیکل چیمینو 77 برس کے عمر میں انتقال کر گئے ہیں۔

ان کے وکیل اور خاندانی ذرائع کے مطابق ان کا انتقال سنیچر کو ہوا۔

مائیکل چیمینو نے کل آٹھ فلموں کی ہدایت کاری کی تھی اور سنہ 1978 میں ویت نام پر بنائی گئی فلم ’دی ڈیئر ہنٹر‘ ان کی وجہ شہرت تھی۔

اگرچہ ’دی ڈیئر ہنٹر‘ کا شمار ہالی وڈ کی تاریخ کی بہترین فلموں میں ہوتا تھا ان کی اگلی فلم ’ہیونز گیٹ‘ ناکام رہی تھی۔

ایرک ویزمن کا کہنا تھا کہ چیمینو لاس اینجلس میں اپنے گھر پر مردہ حالت میں پائے گئے تھے۔ تاحال ان کی موت کی وجودہات سامنے نہیں آئیں۔

دی ڈیئر ہنٹر میں رابرٹ ڈی نیرو اور کرسٹوفر والکن نے اداکاری کے جوہر دکھائے تھے اور سنہ 1979 میں اسے بہترین فلم سمیت پانچ اکیڈمی ایوارڈ ملے تھے۔

مائیکل چیمینو نے اپنے کیریئر کا آغاز ایڈورٹائزنگ ایگزیکٹیو کے طور پر کیا تھا اور سنہ 1974 میں انھوں نے فلمی میدان میں قدم رکھتے ہوئے کلنٹ ایسٹووڈ اور جیف بریجز کی کاسٹ پر مشتمل فلم ’تھنڈر بولٹ اینڈ لائیٹ فٹ‘ بنائی۔

سنہ 1990 میں مائیکل رورکی اور انتھونی ہوپکنز کی فلم ’دیسپریٹ آورز‘ کی ہدایات تھی اور سنہ 1986 میں ماریو پوزو کے ناول گاڈفادر سے ماخوذ فلم ’دی سیسیلین‘ بنائی تھی۔

اسی بارے میں