شاہ رخ کو پھر امریکی ہوائی اڈے پر روک لیاگیا

Image caption جب کبھی میں خود میں غرور محسوس کرتا ہوں میں امریکہ کا چکر لگا لیتا ہوں: شاہ رخ خان

بالی وڈ کے مشہور اداکار شاہ رخ خان کو ایک مرتبہ پھر امریکہ میں ہوائی اڈے پر روکے جانے کا واقعہ پیش آیا ہے۔

یہ واقعہ امریکی ریاست کیلیفورنیا کے دارالحکومت لاس اینجلس کے ہوائی اڈے پر پیش آیا اور شاہ رخ خان نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں اس کی تصدیق کی ہے۔

شاہ رخ خان نے اپنی ٹویٹ میں اس واقعے پر مایوسی کا اظہار کیا تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ انھیں کیوں اور کتنی دیر تک روکا گیا۔

جمعے کو لاس اینجلس جانے والے شاہ رخ حان نے ٹویٹ کیا کہ ’میں پوری دنیا میں سکیورٹی کے طریقۂ کار کا احترام کرتا ہوں اور اسے سمجھتا ہوں لیکن امریکی امیگریشن حکام کی جانب سے ہر بار روکے جانا بہت برا لگتا ہے۔‘

تاہم ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہوائی اڈے پر انتظار کے دوران انھوں نے کچھ پوکے مون پکڑ لیے اس لیے یہ انتظار زیادہ کٹھن نہیں تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ

امریکہ کے امیگریشن حکام کی جانب سے تو اس حوالے سے کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے تاہم امریکی محکمۂ خارجہ کی جنوبی اور وسطی ایشیا کے امور کے حوالے سے نائب سیکریٹری نشا بسوال نے شاہ رخ خان کو مخاطب کرتے ہوئے ٹویٹ کی کہ ’پریشانی کے لیے معذرت لیکن خود امریکی سفارتکاروں کو بھی ایسی ہی صورتحال کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔‘

خیال رہے کہ شاہ رخ خان کو ماضی میں بھی امریکہ داخلے کے وقت پوچھ گچھ کا سامنا رہا ہے۔

سنہ 2012 میں بھی انھیں 90 منٹ تک نیویارک کے ہوائی اڈے پر روکا گیا تھا۔ جبکہ اس سے پہلے سنہ 2009 میں انھیں دو گھنٹے تک نیوآرک کے ہوائی اڈے پر روکا گیا اور انڈیا کے سفارت خانے کی مداخلت پر ہی انھیں جانے دیا گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ

سنہ 2012 میں شاہ رخ خان کو روکے جانے کے بعد امریکی کسٹم حکام نے معذرت کی تھی۔

بعد ازاں شاہ رخ خان اس واقعے کا مذاق بناتے رہے۔ ایک مرتبہ یونیورسٹی کے طلبا سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا تھا ’جب کبھی میں خود میں غرور محسوس کرتا ہوں میں امریکہ کا چکر لگا لیتا ہوں اور وہاں امیگریشن حکام سارا سٹارڈم نکال پھینکتے ہیں۔‘

شاہ رخ خان اب تک 70 سے زیادہ فلموں میں کام کر چکے ہیں اور انڈیا کے سب سے نامور اور محبوب اداکاروں میں شامل ہیں۔

اسی بارے میں