پاک بھارت تعلقات: بالی وڈ کا کامیاب فارمولا

Image caption بطارتی فلمیں پاکستان میں بہت مقبول ہیں

بھارت اور پاکستان امن معاہدے کے کسی بھی فارمولے پر متفق ہوں نہ ہوں، لیکن پاکستان اور بھارت کا یہی رشتہ بالی وڈ کے لیے ایک ’ہِٹ‘ فارمولا بن چکا ہے۔

بالی وڈ کے تقریباً تمام بڑے بینر اس فارمولے کو الگ الگ طریقے سے آزماتے رہے ہیں اور اب تک کا تجربہ تو یہی بتاتا ہے کہ اس فارمولے نے فلمسازوں کو فائدہ ہی پہنچایا ہے۔

بالی وڈ میں بھارت اور پاکستان کے رشتوں پر کئی فلمیں بنیں ہیں کبھی تقسیم، تو کبھی جنگ، اور کبھی محبت اور ان میں زیادہ تر فلمیں باکس آفس پر کامیاب ہی ثابت ہوئیں۔

بجرنگی بھائی جان

2015 میں کبیر خان کی ہدایت میں بنائی گئی فلم ’بجرنگی بھائی جان‘ بھارت پاکستان میں بھائی چارے کی عکاسی کرتی فلم تھی۔

تقریباً 90 کروڑ روپے میں بنی بجرنگی بھائی جان نے سلمان خان کی مقبولیت کے سہارے تقریبا 316 کروڑ روپے کی کمائی کی۔

فلم میں پاکستان کا انسانی پہلو ہونے کی وجہ سے اسے پاکستان میں بھی پذیرائی ملی۔

Image caption فلم ایک ترھا ٹائگر میں سلمان ایک جاسوس بنے تھے

ایک تھا ٹائیگر

يش راج کی سنہ 2012 میں آنے والی فلم ’ایک تھا ٹائیگر‘ میں سلمان خان بھارتی جاسوس بنے تھے جو پاکستاني جاسوس قطرینہ کیف سے عشق کر بیٹھتا ہے۔

ایکشن اور رومانس سے بھری اس فلم کو بھارت میں بہت پسند کیا گیا۔

90 کروڑ میں بنی ایک تھا ٹائیگر نے تقریبا 200 کروڑ کی کمائی کی۔

Image caption اس فلم میں دونوں ملکوں کے فلموں کے لیے دیوانگی دکھائی گئی تھی

فلمستان

بہت چھوٹے بجٹ میں بنائی گئی فلم ’فلمستان‘ میں دونوں ملکوں کی فلموں کے لیے دیوانگی دکھائی گئی تھی۔

چھوٹے بجٹ کی اس فلم نے تقریبا 6 کروڑ کی کمائی کر کےسب کو حیران کر دیا تھا۔

Image caption ویر زارا ایک پاکستانی لڑکی اور بھارتی لڑکے کے درمیان محبت کی کہانی تھی

ویر زارا

بالی وڈ کے کنگ آف رومانس یش چوپڑا نے شاہ رخ خان کے ساتھ ’ویر زارا‘ بنائی۔

اس میں بھارتی فضائیہ کے پائلٹ کا کردار ادا کرنے والے شاہ رخ خان کو لاہور کی لڑکی پريٹي زنٹا سے محبت ہو جاتی ہے اور ان کے لیے وہ اپنی شناخت کھونے کو بھی تیار ہو جاتے ہیں۔

2004 میں 25 کروڑ کی لاگت سے بنائی گئی ویر زارا نے تقریباً 100 کروڑ کا بزنس کیا اور یش چوپڑا کی بہترین فلموں میں اپنا نام درج کروایا۔

Image caption فلم غدر بھی ایک محبت کی کہانی تھی

غدر: ایک محبت کی کہانی

سنہ 2001 میں 18 کروڑ روپے کی لاگت سے بھارت پاکستان کی تقسیم پر بنی فلم ’غدر - ایک محبت کی کہانی‘ نے باکس آفس پر غدر ہی مچا دیا۔

سنی دیول اور ایشا پٹیل کی فلم بالی وڈ کی 100 کروڑ روپے کمانے والی پہلی فلم بنی۔

فلم میں سنی دیول کا نلکہ اکھاڑنے والا سین آج بھی ناظرین کے پسندیدہ مناظر میں سے ہے۔

بارڈر

سنہ 1971 میں انڈیا اور پاکستان کی جنگ سے متعلق کہانی پر بنی آئی جے پی دتہ کی فلم ’بارڈر‘ تقریباً 11 کروڑ میں تیار ہوئی تھی۔

1997 میں بنائی جانے والی اس فلم نے 50 کروڑ روپے سے زیادہ کمائے تھے۔

اس فلم کا گانا ’سندیسے آتے ہیں‘ بہت مقبول ہوا تھا۔

Image caption ’حنا‘ میں زیبا بختیار نے ہیروئن کا کردار نبھایا تھا

حنا

فلم ’حنا‘ انڈو پاک تعلقات پر بنائی جانے والی ایک عمدہ فلم ہے۔

سینیئر صحافی جے پی چوكسے کے مطابق راج کپور کے ذہن میں ’حنا‘ کی کہانی منموہن دیسائی کی 1960 میں بنی راج کپور اور نوتن کی فلم ’چھليا‘ کے دوران آئی تھی۔

راج کپور کی اس خواہش کو ان تینوں بیٹوں رندھیر، راجیو اور رشی کپور نے 1991 میں حقیقت میں تبدیل کیا۔

فلم کی ہدایات رندھیر کپور نے دیں تو راجیو کپور نے بڑے بھائی رندھیر کے ساتھ مل کر ڈویلپر کا کام سنبھالا اور چھوٹے بھائی رشی کپور نے اداکاری کی کمان سنبھالی۔

پاکستانی اداکارہ زیبا بختيار نے فلم میں پاکستاني لڑکی حنا کا کردار نبھایا جسے یاداشت کھونے والے انڈین لڑکے (رشی کپور) سے پیار ہو جاتا ہے۔

فلم کو دونوں ممالک کے شائقین نے سر آنکھوں پر بٹھایا۔ چار کروڑ روپے میں بنی اس فلم نے اپنی لاگت سے دگنی کمائی کی تھی۔

Image caption گرم ہوا بلراج ساہنی کی آخری فلم تھی

گرم ہوا

1973 میں آئی ایم ایس ستھيو کی بھارت پاکستان کی تقسیم پر بنی فلم ’گرم ہوا‘نے بٹوارے کے درد کو خوبصورتی سے بیان کیا۔

دس لاکھ کی لاگت سے بنی گرم ہوا بلراج ساہنی کی آخری فلم تھی۔

چوكسے کے مطابق یہ فلم سلور جوبلی تو نہیں منا پائی، پر کافی کمائی کرگئی۔

بھارت میں سیاسی اتار چڑھاؤ کی وجہ سے ’گرم ہوا‘ کو تقریبا 8 ماہ سینسر بورڈ کی گرفت میں رہنا پڑا۔

یہ فلم بھارت کی جانب سے آسکر کے لیے بھی بھیجی گئی تھی۔