جیکی چن کو اعزازی آسکر دینے کا فیصلہ

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption 62 سالہ جیکی چن کا تعلق ہانگ کانگ سے ہے اور انھوں نے درجنوں مارشل آرٹس فلموں میں کام کیا ہے

ایکشن فلموں کے ہیرو، مصنف، ڈائریکٹر اور مارشل آرٹس فنکار جیکی چن کو فلموں میں ’غیرمعمولی کارکردگی دکھانے‘ کے اعتراف میں اعزازی آسکر ایوارڈ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

امریکہ کی فلم اکیڈمی نے ان کے علاوہ ایڈیٹر این کوٹس، کاسٹک ڈائریکٹر لیئن سٹال ماسٹر اور دستاویزی فلم ساز فریڈریک وائزمین کو بھی یہ ایوارڈ دینے کے لیے ووٹ دیا۔

اکیڈمی کے صدر چیرل ازاکس نے اس چاروں کو ’اپنے اپنے شعبوں میں حقیقی عہد ساز اور لیجنڈ قرار دیا۔‘

62 سالہ جیکی چن کا تعلق ہانگ کانگ سے ہے اور انھوں نے درجنوں مارشل آرٹس فلموں میں کام کیا ہے۔

انھیں کئی فلموں میں عالمی شہرت ملی جن میں ’رمبل اِن دی برونکس، ’دی رش آور‘ اور اینیمیش فلم ’کنگ فُو پانڈا‘ شامل ہیں۔

ایوارڈ حاصل کرنے والے باقی تینوں افراد کا بھی فلمی صنعت میں طویل وقت گزرا ہے۔

این کوٹس کو فلم ایڈیٹنگ کے شعبے میں 60 سال سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے۔ انھیں فلم ’لارنس آف عریبیا‘ میں اپنے کام پر آسکر مل چکا ہے۔

لیئن سٹال ماسٹر200 سے زائد فیچر فلموں سے وابستہ رہے ہیں جن میں ’دی گریجویٹ‘ اور ’ڈیلیورینس‘ شامل ہیں، جب کہ ’ فریڈریک وائزمین‘ سنہ 1967 سے تقریباً ہر سال ایک فلم بناتے رہے ہیں۔

ان فنکاروں کو یہ ایوارڈ نومبر میں گورنرز ایوارڈ کی تقریب کے دوران پیش کیے جائیں گے۔

اسی بارے میں