بلوچستان میں پشتون ثقافت کا عالمی دن

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ اور دیگر علاقوں میں پشتون ثقافت کے دن کی مناسبت سے مختلف تقاریب کا انعقاد کیا گیا۔

گذشتہ سال سے 23 ستمبرکو دنیا بھر میں پشتون ثقافت کے دن کے طور پر منانے کا سلسلہ شروع کیا گیا تھا۔

٭ بلوچستان میں یومِ ثقافت کی تقریبات

٭ بلوچستان کے یومِ ثقافت کی تصویری جھلکیاں

رواں برس آٹھ اگست کو ایک خود کش حملے میں 56 وکلا سمیت 76 افراد کی ہلاکت کے باعث اس سال اس دن کو سادگی سے منایا گیا۔

پشتون ثقافت کے دن کی مناسبت سے مقامی شاپنگ مال میں مختلف سٹالز لگائے گئے تھے جہاں پشتون ثقافت کے مختلف رنگوں اور پہلوؤں کو اجاگر کیا گیا تھا۔

اس دن کے حوالے سے پشتو اکیڈمی کے زیراہتمام بھی ایک تقریب منعقد کی گئی۔

اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر تعلیم عبد الرحیم زیارتوال نے کہا کہ ثقافت کسی بھی ملک یا قوم کے لیے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے کیونکہ اس کے بغیر اس ملک یا قوم کی اس دنیا میں پہچان ناممکن ہے۔

انھوں نے کہا کہ کوئٹہ میں آٹھ اگست کو رونما ہونے والے ہولناک واقعے کے باوجود پشتو اکیڈمی کے زیر اہتمام پشتون کلچر ڈے سادگی سے منانا نہایت ہی خوش آئند عمل ہے۔

صوبائی وزیر نے اہل قلم، دانشوروں، شعرا او مصنفین پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ پشتون کلچر کے فروغ کے لیے کلیدی کردار ادا کریں۔

تقریب کے شرکا سے در محمد کانسی اور ڈاکٹر عبدالرؤف رفیقی سمیت دیگر مقررین نے تمام سیاسی و ادبی تنظیموں پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس دن کو شایان شان طریقے سے منائیں تاکہ زبان کے ساتھ ساتھ یکجہتی اور یگانگت کو بھی فروغ دیا جاسکے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں