شعیب ملک ثانیہ کے گھر پہنچ گے

شعیب ملک اور ثانیہ مرزا
Image caption شعیب ملک اور ثانیہ مرزا کی شادی اپریل میں طے پائی ہے

بھارتی ٹی وی چینلز کے مطابق پاکستانی کرکٹر شعیب ملک حیدر آباد دکن میں اپنی منگیتر ٹینس سپر سٹار ثانیہ مرزا کے گھر پہنچ گئے ہیں۔

بھارتی ٹی وی چینلز پر شعیب ملک کو حیدر آباد دکن میں ثانیہ مرزا کے گھر کی بالکنی پر کھڑے فون پر بات کرتے دکھایاگیا ہے۔

حیدرآباد میں بی بی سی کے نامہ نگار عمر فاروق کا کہنا ہے کہ شعیب ملک نصف شب دبئی سے حیدرآباد پہنچے اور اس کے بعد سے وہ اپنی ہونے والی شریکِ حیات ثانیہ مرزا کے گھر ہی میں مقیم ہیں۔ حالانکہ کے ثانیہ مرزا کے خاندان نے اب تک شعیب ملک کی موجودگی کی تصدیق نہیں کی ہے لیکن ٹی وی چینلز کی فوٹیج میں وہ ثانیہ مرزا کے گھر کی بالکنی پر کھڑے فون پر باتیں کرتے دیکھے جا سکتے ہیں۔ بالکنی پر دونوں فون پر بات کر رہے تھے اور ثانیہ کی والدہ بھی موجود تھیں۔

Image caption ثانیہ مرزا نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ شادی سے بہت خوش ہیں اور شادی کے بعد دبئی میں رہیں گی

یاد رہے کہ بھارتی ٹینس سٹار ثانیہ مرزا اور پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شعیب ملک کی منگنی کی خبر کی تصدیق پچھلے ہفتے ہوئی تھی۔ دونوں کے خاندانوں نے منگنی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ بھر پور انداز میں شیعب اور ثانیہ شادی کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔

نامہ نگار کے مطابق شعیب ملک ایک ایسے وقت حیدر آباد دکن میں موجود ہیں جب وہاں کی ہی ایک رہائشی عائشہ صدیقی کی والدہ نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ شعیب ملک کا نکاح ان کی بیٹی سے ہو چکا ہے اور وہ ان کی بیٹی کو طلاق دیں اور پھر جہاں شادی کرنی ہے کر لیں۔

صدیقی خاندان نے شعیب پر ان کی بیٹی عائشہ کے ساتھ دھوکہ دہی کا الزام عائد کرتے ہوئے انہوں ایک قانونی نوٹس بھیجا ہے۔ یہ نوٹس پاکستان کے ایک وکیل فاروق حسین کے ذریعے بھیجا گیا ہے۔

جمعہ کو صدیقی خاندان نے ایک نکاح نامہ بھی جاری کیا تھا جو ان کے مطابق عائشہ اور شعیب ملک کی شادی کا ثبوت ہے۔ صدیقی خاندان کا دعویٰ ہے کہ ان کا فون پر نکاح سنہ دو ہزار دو میں ہوا تھا۔ تاہم شعیب ملک کا خاندان اس کی تردید کر رہا ہے۔ شعیب ملک کے بہنوئی عمران ظفر نے الزام عائد کیا ہے کہ صدیقی خاندان نے ان کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ ’پہلے ایک خوبصورت لڑکی کی تصویر دکھائی اور بعد میں شعیب کی ملاقات ایک دوسری لڑکی سے کروائی۔‘

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس خوبصورت لڑکی کی تصویریں ان کے پاس موجود ہیں۔

عائشہ کی والدہ فریسہ صدیقی نے اس پر سخت ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے شعیب ملک کو چیلنج کیا ہے کہ وہ تصویریں جاری کریں اور عمران ظفر کے پیچھے چھپنے کے بجائے خود بات کریں۔

صدیقی خاندان کے ایک اور فرد ڈاکٹر شمس بابر نے کہا ہے کہ شعیب ملک کے خلاف دھوکہ دہی کامقدمہ درج کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ شعیب ملک کو چاہیئے کہ وہ عائشہ کو طلاق دے دیں۔

’ہمیں ان سے کچھ فائدہ نہیں چاہیئے۔ اب جب وہ ثانیہ سے شادی کرنے جا رہے ہیں تو بس ہم اتنا چاہتے ہیں کہ وہ ہماری لڑکی کو چھوڑ دیں۔ طلاق دے کر معاملہ ختم کریں۔‘

انہوں نے کہا کہ اگر ایسا نہیں ہوا تو وہ قانونی چارہ جوئی کریں گے کہ شعیب عائشہ کو طلاق دیں۔

دوسری طرف شعیب ملک کے خاندان نے بھی دھمکی دی ہے کہ وہ صدیقی خاندان پر ہتکِ عزت کا دعویٰ دائر کر رہے ہیں۔ اس کے لیے انہوں نے دلی کے ایک وکیل رمیش گپتا کی خدمات حاصل کی ہیں۔

واضح رہے کہ شعیب ملک اور ثانیہ مرزا کی منگنی پر مہاراشٹر کی علاقائی سیاسی جماعت کے سربراہ بال ٹھاکرے نے بھی سخت ناراضی کا اظہار کیا ہے۔

اپنے ترجمان اخبار ’سامنا‘ کےاداریے میں انہوں نے ثانیہ پر سخت تنقید کی اور کہا ’اگر ثانیہ سچی ہندوستانی ہوتیں تو ان کا دل کسی پاکستانی کے لیے کبھی نہیں دھڑکتا۔‘

اسی بارے میں