’دہلی پر دہشت گرد حملہ کر سکتے ہیں‘

امریکہ کے علاوہ برطانیہ ، آسٹریلیا اور کیناڈہ نے بھی اپنے شہریوں سے الرٹ رہنے کو کہا ہے امریکہ نے کہا ہے کہ شدت پسند تنظمیوں کی طرف سے بھارت کے دارالحکومت دلّی میں دہشت گردی کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

امریکی ایمبسی کی ویب سائٹ پر جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’اس بات کے واضح اشارے مل رہے ہیں کہ شدت پسند تنظیمیں نئی دہلی پر حملے کرنے منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔‘

اس بیان میں لوگوں سے کہا کہ گیا ان مقامات پر جانے سے اجتناب کریں جو مغربی سیاحوں کے لیے مشہور۔

گزشتہ ماہ بھی امریکہ نے اس طرح کی ہدایت جاری کی تھی جس میں ان مقامات کی نشاندہی بھی کی گئی تھی۔ ان مقامات میں دلی کے چاندنی چوک ، کناٹ پلیس، قرول باغ ، مہر ولی اور سروجنی نگر کے نام شامل تھے۔ان مقامات پر امریکی اور غیر ملکی افراد بڑی تعداد میں آتے جاتے رہتے ہیں۔

امریکہ کے علاوہ برطانیہ، آسٹریلیا اور کینیڈا نے بھی اپنے شہریوں سے ہوشیار رہنے کو کہا گیا ہے۔

خیال رہے اس برس دلی میں دولت مشترکہ کھیل ہونے والے ہیں اور بھارتی حکومت نے ان کھیلوں کے دوران دلی میں مکمل سکیورٹی فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے تاہم کئی ممالک اس دوران سکیورٹی کے تئيں اپنی تشویش کا اظہار کر چکے ہیں۔

کچھ عرصہ قبل بھارتی وزارت داخلہ نے واضح کیا تھا کہ دلی میں سکیورٹی کے مناسب انتظامات کیے جائيں گے اور اس میں دیگر ممالک کی سکیورٹی ایجنسیوں سے بھی مشورہ کیا جا رہا ہے۔

اسی بارے میں