آئی پی ایل پر اب تفریحی ٹیکس

آئی پی ایل

بھارت کی ریاست مہاراشٹر کی حکومت اب انڈین پریمیئر لیگ اور ٹی ٹوئنٹی میچوں پر تفریحی ٹیکس عائد کرے گی۔ اس بات کا اعلان پیر کے روز حکومت نے ممبئی ہائی کورٹ میں ایک حلف نامہ کے ذریعہ کیا۔

حکومت کے حلف نامہ کے مطابق شہر، ضلع یا گاؤں میں کھیلے جانے والے میچ پر دس سے پچیس فیصد تفریحی ٹیکس عائد ہو گا لیکن اس کا نفاذ مستقبل میں ہونے والے میچوں پر ہو گا۔

مہاراشٹر کی حزب اختلاف کی سیاسی جماعت شیوسینا کے لیڈر سبھاش دیسائی نے اس سال ہونے والے آئی پی ایل میچوں کے دوران عدالت میں مفاد عامہ کی ایک عرضداشت داخل کی تھی جس میں انہوں نے کہا تھا کہ آئی پی ایل تھری منافع بخش کرکٹ میچ ہے اور اس لیے اس پر سنیما کی ہی طرح تفریحی ٹیکس عائد کیا جانا چاہیے۔

دیسائی کا کہنا تھا کہ ٹیکس عائد نہ کرنے سے حکومت کو کروڑوں روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑ رہا ہے۔

دیسائی نے عدالت کے فیصلے پر اطمینان ظاہر کیا لیکن ساتھ ہی مطالبہ کیا کہ حکومت کو آئی پی ایل تھری کے ہوجانے والے میچوں پر بھی تفریحی ٹیکس عائد کرنا ہو گا۔

گزشتہ برس آڈیٹر جنرل کی رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ آئی پی ایل کے میچوں پر تفریحی ٹیکس عائد نہ کرنے کی وجہ سے حکومت کو 4.99 کروڑ روپے کا خسارہ برداشت کرنا پڑا ہے۔ اس رپورٹ کے بعد دیسائی نے عدالت میں عرضی داخل کی تھی۔ عدالت نے حکومت کو میچ پر تفریحی ٹیکس عائد نہ کرنے پر سرزنش بھی کی تھی۔

گزشتہ مہ مہاراشٹر کے کابینہ کے اجلاس میںیہ حتمی فیصلہ کیا گیا تھا کہ کرکٹ میچوں پر تفریحی ٹیکس عائد کیے جائیں گے۔