لیہ اور لداخ کی ازسر نو بحالی کا وعدہ

منموہن سنگھ
Image caption وزیراعظم کا کہنا ہے کہ بازآبادکاری میں پیسوں کی کوئی کمی نہیں ہوگي

بھارت کے وزیر اعظم منموہن سنگھ نے لیہ، لداخ میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں کی تعمیر نو کا اعلان کیا ہے۔

یہ اعلان منموہن سنگھ نے منگل کے روز سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے دورے کے دوران کیا۔

بھارتی وزیراعظم نے لیہ اور لداخ کے دورے کے دوران کہا کہ متاثرہ علاقوں کی تعمیر نو کا فوری بندوبست کیا جائے گا۔

لیہ میں گزشتہ دنوں بادل پھٹنے سے ہونے والی موسلا دھار بارش سے خاصا جانی و مالی نقصان ہوا تھا۔

ان بارشوں کے بعد آنے والے سیلاب کے سبب تقریبا دو سو لوگ ہلاک ہوئے تھے اور بعض گاؤں سیلابی پانی میں بہہ گئے تھے۔

بھارتی وزیراعظم نے امدادی کیمپوں کا دورہ کرنے کے بعد متاثرہ علاقوں میں آباد کاری کے لیے ایک سو پچیس کروڑ روپے دینے کا اعلان کیا۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سیلاب کے سبب جو مکانات تباہ ہوئے ہیں انہیں دوبارہ تعمیر کیا جائیگا اور '' اس بارے میں پیسوں کی قلت کا سامنا نہیں کرنے پڑیگا۔'' ان کا کہنا تھا کہ مکانات کی تعمیر کا کام سردی سے پہلے ہی مکمل کر لیا جائیگا۔

اس سے قبل حکومت نے سیلاب سے ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو ایک لاکھ اور زخمی ہونے والے ہر فرد کو پچاس ہزار روپے دینے کا اعلان کیا تھا۔

متاثرہ علاقوں کے اس دورے کے دوران وزیر اعطم منموہن سنگھ کے ہمراہ ریاست کے وزیر اعلی عمر عبداللہ بھی تھے جنہوں نے آبادکاری کے عمل میں ہر ممکن مدد کا وعدہ کیا۔

چھ اگست کو لداخ میں آئے سیلاب کے باعث کچھ غیر ملکی سیاح اور دو درجن سے زاد بھارتی فوجی بھی ہلاک ہوئے تھے ۔

اسی بارے میں