اتراکھنڈ:سکول کی چھت گرنے سے اٹھارہ ہلاک

فائل فوٹو
Image caption بارش کی وجہ سے کم بچے ہی سکول میں تھے

ہندوستان کی ریاست اتراکھنڈ کے پہاڑی ضلع باگیشور میں بادل پھٹنے کے نتیجے میں طوفانی بارش سے سکول کی چھت گرنے سے اٹھارہ بچے ہلاک ہوئے ہیں جبکہ متعدد اب بھی ملبے تلے دبے ہیں۔

بادل پھٹنے یا ’کلاؤڈ برسٹ‘ کا یہ واقعہ کپ کوٹ اسبملی حلقے کے ہرسنیابگڑ گاؤں میں بدھ کی صبح پیش آیا ہے اور طوفانی پانی کے ریلے میں کھیت، سڑک اور کئی مکانات بہہ گئے۔

اس طوفانی بارش سے قریبی سمڑگڑھ گاؤں کے سروستی ششو مندر سکول کی عمارت کی چھت گر گئی اور وہاں موجود پچیس سے تیس بچے ملبے میں دب گئے جن میں سے اٹھارہ بچوں کی لاشوں کو نکالا جاچکا ہے۔ اطلاعات کے مطابق چھ بچے شدید زخمی ہیں۔

اتراکھنڈ میں کرائسز مینجمنٹ کے وزیر خزانداس نے بی بی سی کو بتایا کہ ’یہ واقعہ صبح آٹھ بجے پیش آیا ہے اور امدادی اہلکار جائے وقوع پر پہنچ گئے ہیں۔ اب تک 18 بچوں کی لاشوں کو نکالا جاچکا ہے جبکہ چھ بچوں کو زندہ نکالا گیا ہے لیکن ان کی حالات نازک ہے‘۔

ان کا کہنا تھا کہ وہ نہیں بتاسکتے کہ کتنے بچے ابھی ملبے تلے دبے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ مسلسل بارش کی وجہ سے ملبہ ہٹانے کے کام میں مشکل پیش آ رہی ہے۔

یہ گاؤں دور دراز کے پہاڑیوں پر بسے ہیں اس لیے مسلسل بارش کی وجہ سے وہاں پہنچنا مشکل ہے۔ ان علاقوں میں ٹیلی فون لائن بھی ٹھپ ہوگئی ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں سے رابطہ مشکل ہوگیا ہے۔

اسی بارے میں