بھارت سے اربوں ڈالر کے سودے

امریکی صدر اوباما
Image caption براک اوباما کے ساتھ ڈھائی سو سے زیادہ کمپنیوں کے اعلیٰ اہلکار اور نمائندے بھی بھارت آئے ہیں

امریکہ کے صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ امریکی کمپنیوں نے بھارت سے دس ارب ڈالر مالیت کے بیس سودوں کے معاہدے کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان سودوں سے امریکہ میں پچاس ہزار نئی ملازمتیں پیدا ہوں گی۔

بھارت کے دورے کے پہلے روز ممبئی میں امریکہ اور بھارت کے سرکردہ صنعت کاروں اور مندوبین سے خطاب کرتے ہوئے صدر اوباما نے کہا کہ مالیت کے اعتبار سے بھارت امریکہ کا بارہواں تجارتی ساتھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں میں اقتصادی تعلقات کے وسیع امکانات ہیں۔

امریکی صدر نے کہا کہ تجارت آج یک طرفہ ٹریفک نہیں ہے اور اس سے دونوں ہی ملکوں کو فائدہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان غیر معمولی اقتصادی امکانات موجود ہیں۔

براک اوباما کے ساتھ ڈھائی سو سے زیادہ کمپنیوں کے اعلیٰ عہدیدار اور نمائندے بھی بھارت آئے ہیں جو اب تک کسی بھی صدر کے ساتھ آنے والا سب سے بڑا تجارتی وفد ہے۔

صدر اوباما نے کہا کہ وہ بھارت سے طویل مدتی شراکت کے اقتصادی تعلقات پیدا کرنے کی کو شش کر رہے ہیں۔ امریکہ اور انڈیا کے درمیان سن دو ہزار آٹھ میں چالیس ارب ڈالر کی تجارت ہوئی تھی۔ یہ امریکہ کی چین اور یورپ کے ساتھ تجارت کے مقابلے میں بہت کم تھی۔

صدر نے بھارت کے لیے ایک اہم اعلان یہ کیا کہ امریکہ خلائی تحقیق کے ادارے ’اسرو‘ اور دفاعی تحقیق کے ادارے ’ڈی آر ڈی او‘ پر اعلیٰ ٹیکنالوجی فراہم کرنے پر لگائی گئی پابندی ختم کی جا رہی ہے۔

بھارت ایک عرصے سے امریکہ سے یہ مطالبہ کر رہا تھا کہ اس کے سائنسی تحقیقی اداروں پر دوہرے استعمال یعنی فوجی مقاصد کے لیے بھی استعمال کی جانے والی ٹیکنالوجی کی امریکہ سے برآمد پر عائد پابندیاں ہٹا لی جائیں۔

امریکی صدر نے یہ وعدہ بھی کیا ہے کہ امریکہ بھارت کو جوہری سپلائی گروپ میں شامل کیے جانے میں اس کی مدد کرے گا۔ امریکی صدر نے بھارت پر زور دیا کہ وہ بھی تجارتی رکاوٹیں ہٹائے اور اپنی منڈی کے دروازے دیگر ملکوں کے لیے کھولے۔

بھارت کے ساتھ جو اقتصادی معاہدے ہوئے ہیں ان میں اہم سودے ابتدائی اطلاعات کے مطابق امریکہ کی جی ای کمپنی اور بوئنگ کے ساتھ ہوئے ہیں۔

اس سے قبل مسٹر اوباما نے ممبئی پہنچنے پر تاج محل ہوٹل میں دو برس قبل شدت پسندوں کے حملے میں ہلاک ہونے والوں کی یاد میں ایک جلسے سے خطاب کرتے ہو ئے اپنے دورے کا آغاز کیا۔

انہوں نے کہا کہ ممبئی ہندوستان کے عوام کی مزاحمت اور مستقبل کی امیدوں کا غماز ہے۔ صدر نے کہا کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے میں امریکہ ہندوستان کے ساتھ متحد کھڑا ہے۔

اسی بارے میں