نئی دلّی: رہائشی عمارت منہدم، چونتیس ہلاک

Image caption تیس افراد اب بھی ملبے تلے دبے ہوئے ہیں

بھارت کے دارالحکومت نئی دلّی میں پولیس حکام کا کہنا ہے کہ شہر کے گنجان آباد علاقے میں ایک پانچ منزلہ عمارت منہدم ہونے سے کم از کم چونتیس افراد ہلاک اور ساٹھ زخمی ہوگئے ہیں۔

نئی دلّی کے پولیس کمشنر بی کے گپتا کا کہنا ہے کہ دارالحکومت کے مشرقی علاقے للیتا پارک میں واقع یہ عمارت پیر کی شام گری تھی اور رات بھر جاری رہنے والی امدادی سرگرمیوں کے باوجود ملبے تلے اب بھی بہت سے لوگ دبے ہوئے ہیں۔

ملبے تلے دبے افراد کی تلاش: تصاویر

عمارت کے منہدم ہونے کے فوراً بعد آس پاس سے لوگ جائے حادثہ پر پہنچ گئے اور فوری طور پر ملبے میں دبے افراد کو نکالنے کی کوششیں شروع کیں۔

حادثے کے بعد علاقے کی تنگ گلیوں کی وجہ سے امدادی کارکنوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

جائے حادثہ پر امدادی کارروائیوں کی نگرانی کرنے والی نئی دلّی کی وزیراعلٰی شیلا ڈکشٹ کے مطابق تیس افراد ملبے تلے دبے ہوئے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ فوری طور پر یہ پتہ نہیں چلایا جا سکتا کہ عمارت کیوں گری تاہم اس واقعے کی انکوائری کی جائے گی۔

دلّی میونسپل کارپوریشن کے ایک افسر اے کے والیا نے بھارتی خبر رساں ادارے پریس ٹرسٹ آف انڈیا کو بتایا ہے کہ ممکنہ طور پر رواں برس کی مون سون بارشوں نے اس کئی عشرے قدیم عمارت کی بنیادوں کو کمزور کر دیا تھا۔

بھارت میں ماضی میں رہائشی عمارتوں کے انہدام کے متعدد واقعات پیش آ چکے ہیں اور عموماً ناقص تعمیراتی سامان اور کمزور بنیادوں کو ان واقعات کی وجہ قرار دیا جاتا ہے۔

اسی بارے میں