بھارت مستقل رکنیت کا حقدار، سرکوزی

کارلا برونی نکولس سرکوزی
Image caption فرانس کے صدر اپنی بیوی کے ساتھ بھارت پہنچے ہیں

بھارت کے دورے پر آئے ہوئے فرانس کے صدر نکولس سرکوزی نے اقوام متحدہ میں بھارت کی مستقل رکنیت کی حمایت کی ہے۔

وہ سنیچر کو بھارت کے چار روزہ دورے پر جنوبی شہو بنگلور پہنچے ہیں۔

بنگلور میں انہوں نے بھارتی خلائی ادارے اسرو کے سائنس دانوں اور طلباء سے خطاب کیا ہے۔

اپنے خطاب میں انہوں نے کہا ’بھارت اقوام متحدہ کی سکیورٹی کؤنسل میں مستقل رکنیت کا حق دار ہے۔ بھارت سمیت برازیل، جرمنی، جاپان، افریقہ اور عرب ممالک کو سکیورٹی کؤنسل میں ہونا چاہیے۔‘

نکولس سرکوزی اپنے سات وزراء سمیت ساٹھ افراد پر مشتمل وفد کے ساتھ بھارت دورے پر آئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق ان کے اس دورے کا اصل مقصد دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تعاون اور سویلین مقاصد کے لیے جوہری تعاون پر بات چیت کرنا ہے۔

سرکوزی نے بھارت کے غیر فوجی جوہری پروگرام کی حمایت کی ہے لیکن کہا کہ اس سلسلے میں انڈسٹری کے حساب سے ابھی اس کی پہنچ محدود ہے۔

ان کا کہنا تھا ’فرانس بھارت کا دوست ہے۔ ہم بھارت کے جوہری پروگرام کی ترقی میں اس کی مدد کریں گے۔ جیت پور میں جوہری پلانٹ لگانے میں مدد کر کے ہمیں خوشی ہوگی جہاں سے سے دس ہزار میگا واٹ توانائی پیدا ہو سکےگی۔ جوہری معاملے پر بھارت کو الگ رکھنے کی پالیسی بند ہونا چاہیے۔‘

امریکہ کے ساتھ جوہری معاہدے کے بعد بھارت کو جوہری توانائی کے لیے مختلف پلانٹس لگانے ہیں اور اس کے لیے فرانس بھارت میں اپنا بازار تلاش کر رہا ہے۔

جی ٹوئنٹی کی صدارت جلدی ہی فرانس کو ملنے والی ہے اور کرنسی سمیت دیگر امور کے حوالے سے جی ٹوئنٹی میں اصلاح کے لیے فرانس بھارت کی حمایت چاہتا ہے۔

اتوار کے روز فرانس کے صدر اپنی اہلیہ کالرا برونی کے ساتھ تاج محل دیکھنے کے لیے آگرہ جائیں گے۔

اسی بارے میں