روسی صدر بھارت پہنچ گئے

روسی صدر دیمتری میڈودیو بھارت کے سرکاری دورے پر پہنچ گئے ہیں۔ وہ اس دورے میں بھارت سے فوجی ساز وسامان اور جوہری بجلی گھر وں کے معا ہدوں پر بات چیت کریں گے۔

دونوں ملکوں کے درمیان مذاکرات میں دو طر فہ امور کے علاوہ علاقائی معا ملات پر گفتگو ہوگی جس میں افغانستان سے گفت و شنید بڑھانے کا معاملہ ایجنڈے میں سر فہرست ہے۔

امکان ہے کہ روسی صدر کے اس دورے میں ’ ففتھ جینریشن ‘ نامی جنگی جہاز کی مشترکہ جہاز سازی کا معا ہدہ طے پا جائیگا۔ ہمارے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ یہ معا ہدہ اس امر کا اشارہ ہوگا کہ بھارت روس سے صرف دفاعی ساز وسامان نہیں خریدنا چاہتا بلکہ اُس سے دفاعی ٹیکنالوجی حاصل کرنے میں دلچسپی رکھتا ہے۔

یہ توقع بھی کی جارہی ہے کہ اس دورے میں روس سے مزید جوہری بجلی گھر خریدنے کا معاہدہ طے پا جائیگا۔

روس کے صدر میڈ دیو نے اپنے دورے سے پہلے کہا ہے کہ بھارت اور روس کے درمیان خصوصی اور دیرینہ دوستانہ تعلقات ہیں تاہم ہمارے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ گزشتہ چند برسوں میں بھارت اور امریکہ کے درمیان بڑھتی ہوئی قربت روس کے لیے بے چینی کا سبب ہے۔

اسی بارے میں