شمالی ہندوستان: سردی سے 24 ہلاک

بھارت سردی
Image caption دلی کی حکومت بے گھر افراد کو گرم کپڑے تقسیم کررہی ہے

شمالی ہندوستان کے بیشتر علاقے سخت سردی کی لپیٹ میں ہیں اور اطلاعات کے مطابق اس ٹھنڈ کی وجہ سے اب تک کم از کم چوبیس افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔۔

سخت سردی کی لپیٹ میں آنے والے علاقوں میں سب سے زیادہ متاثر دارالحکومت دلی اور بھارت کے زیر انتظام کشمیر کے علاوہ ہریانہ، پنجاب اور اتر پردیش شامل ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق کشمیر کے علاقے لیہ میں اتوار کو درجہ حرات منفی تئیس سینٹی گریڈ تک گر گیا۔

اتوار کو دلی میں درجہ حرارت آٹھ ڈگری سینٹی گریڈ سے بھی کم ہوگیا اور شدید دھند کی وجہ سے شہر کی معمول کی زندگی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔دھند کی وجہ سے دلی سے آنے اور جانے والی بیشتر پروازوں کا شیڈول گڑ بڑ ہوا ہے اور بہت سی پروازیں منسوخ کر دی گئی ہیں۔

بھارتی کشمیر کے دارالحکومت سری نگر برف باری ہورہی ہے۔ سردی کی وجہ سے اس علاقے کو ملک کے دوسرے حصوں سے جوڑنے والا ہائی وے بند کردیا گیا ہے۔

دلی میں اس برس معمول سے زیادہ سردی ہورہی ہے۔ کوہرے کے سبب ہوائی اور ریل سفر متاثر ہوا ہے۔ گزشتہ ہفتے کوہرے کی وجہ سے تقریبا دو دن تک متعدد پروازیں منسوخ کرنی پڑی تھیں۔

سڑک پر رات گزارنے والے غریب افراد کو حکومت پناہ دینے کے انتظامات کرنے کے علاوہ مفت کمبل اور گرم کپڑے تقسیم کرنے کا کام کررہی ہے۔

دلی میں اتوار کا دن موسم کا سب سے ٹھنڈا دن رہا۔ اتوار کو درجہ حرارت منفی سات ڈگری سیلسیس تک گر گیا۔

اترپردیش کے بیشتر علاقوں میں شدید سردی ہورہی ہے۔ اطلاعات کے مطابق اترپردیش میں ایک ستر سالہ بزرگ اور دو برس کے ایک بچے کی سردی کی وجہ سے موت ہوگئی ہے۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق جموں و کشمیر میں سردی کی وجہ سے تین افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

اسی بارے میں