بہار: ریاستی رکن اسمبلی کا قتل

فائل فوٹو
Image caption پولیس نے حملہ آور خاتون کو گرفتار کر لیا

بھارت کی ریاست بہار میں پورنیا ضلع سے بھارتیہ جنتا پارٹی کے رکن اسبملی راج کشور کیسری ایک قاتلانہ حملے میں ہلاک ہو گئے ہیں۔

راریاست کے پولیس سربراہ نیل منی کے مطابق ایک خاتون ج کشور پر چاقو سے حملہ کیا اور جب انہیں ہسپتال لے جا یا جا رہا تھا تبھی راستے میں ان کی موت واقع ہوگئی۔

پولیس سربراہ نے حملہ کرنے والی خاتون کا نام روپم پاٹھک بتایا ہے۔

بی بی سی سے بات چیت میں نیل منی نے کہا کہ حملے کے بعد وہاں پر موجود رکن اسبملی کے حامیوں نے مذکورہ خاتوں کی بھی جم کر پٹائی کی ہے۔

ان پر حملہ اس وقت کیا گیا جب صبح وہ اپنی رہائش پر کچھ لوگوں سے ملاقات کر رہے تھے۔ حکام کے مطابق روپم پاٹھک بھی ملاقات کرنے والوں میں تھیں اور شال اوڑھ رکھی تھی۔ جیسے ہی رکن اسبملی ان کے پاس آئے خاتون نے ان پر حملہ کر دیا۔

حملہ کرنے والی خاتون نے راج کشور کیسری پر جنسی زیادتی کا الزام لگایا گیا تھا۔ اب وہ زخمی ہیں اور انہیں گرفتار کرنے کے بعد ہسپتال میں داخل کروا دیا گیا ہے۔

راج کشور کیسری نے جنسی زیادتی کے الزام کو مسترد کیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کے مخالفین نے ایک سازش کے تحت ان کا سیاسی کیرئر برباد کرنے کے لیے اس طرح کے الزامات عائد کروائے ہیں۔

راج کشور کیسری کا تعلق بھارتیہ جنتا پارٹی سے تھا۔ حال ہی میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں وہ مستقل چوتھی بار پورنیا سے منتخب ہوئے تھے۔

اسی بارے میں