پاک بھارت سیکرٹری خارجہ ملاقات کا امکان

Image caption سیکرٹری خارجہ سطح کی یہ ملاقات فروری کے اوائل میں ہو سکتی ہے

بھارتی دفترِ خارجہ کے مطابق بھارتی سیکرٹری خارجہ نروپما راؤ آئندہ ماہ بھوٹان میں اپنے پاکستانی ہم منصب سے ملاقات کر سکتی ہیں۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق اتوار کو دفترِ خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ملاقات چھ اور سات فروری کو بھوٹانی دارالحکومت تھمپو میں جنوبی ایشیا کی علاقائی تعاون کی تنظیم’سارک‘ کی سٹینڈنگ کمیٹی کے اجلاس کے موقع پر ہو سکتی ہے۔

بھارت اور پاکستان کے درمیان امن مذاکرات کی بحالی کی کوششوں نے حال ہی میں زور پکڑا ہے۔

گزشتہ ہفتے بھارتی وزیرِ خارجہ ایس ایم کرشنا نے بھی کہا تھا کہ انہیں امید ہے کہ پاکستانی وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی مارچ میں بھارت کا دورہ کریں گے۔

اس سے پہلے انہوں نے خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں کہا تھا کہ بھارت نے اپنے پڑوسیوں کے ساتھ رشتے بہتر کرنے کے لیے کوششیں کی ہیں اور ’ہم دل سے امید کرتے ہیں کہ ہمارا پڑوسی ہمارے ساتھ مثبت رشتوں کی اہمیت کو سمجھے گا اور زبردستی جارحیت کا رویہ چھوڑ دے گا‘۔

اس بیان پر پاکستان کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر پورے خطے میں امن و استحکام کا قیام انتہائی مشکل ہے اور تمام معاملات صرف بھارتی خواہشات کے مطابق طے نہیں کیے جا سکتے۔

پاکستان اور بھارت کے تعلقات نومبر سنہ 2008 میں ہونے والے ممبئی حملوں کے بعد بہت خراب ہوگئے تھے اور ان دہشتگرد حملوں کے نتیجے میں چار سال سے جاری امن مذاکرات کا عمل بھی رک گیا تھا۔

اس کے بعد سے دونوں ممالک کے درمیان وزرائے اعظم، وزرائے داخلہ و خارجہ کی سطح پر بات چیت تو ہوتی رہی ہے لیکن جامع امن مذاکرات کا سلسلہ بحال نہیں ہوسکا ہے۔

اسی بارے میں