کشمیر: مذہبی براڈکاسٹ پر پابندی؟

کشمیر ایف ام ریڈیو تصویر کے کاپی رائٹ Bbc
Image caption اس ریڈیوسے معلومات اور تفریح کے درجنوں پروگرام نشر ہوتے ہیں جو نہایت مقبول ہیں

بھارت کے زیرانتظام کشمیر کے واحد نجی ایف ایم ریڈیو سے علیٰحدگی پسند رہنما میرواعظ عمرفاروق کے تبلیغی براڈکاسٹ کو بند کردیا گیا ہے۔

سرینگر میں نامہ نگار ریاض مسرور کے مطابق میرواعظ نے انکشاف کیا ہے کہ انہیں مذکورہ ریڈیو چینل کے حکام نے فون پر بتایا کہ پروگرام پر سرکاری ایجنسیوں نے اعتراض کیا تو اسے بند کردیا گیا۔ لیکن بِگ92.7 نامی اس چینل کی نگران کمپنی ریلائنس کیمونکشینز لمییٹڈ نے میرواعظ عمر کے دعوے کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ پروگرام میں محض تبدیلی لائی گئی ہے جسکے تحت اب کے بعد میرواعظ درس نہیں دینگے۔

قابل ذکر ہے کہ رمضان کا مہینہ شروع ہوتے ہی بھارت کے زیرانتظام کشمیر میں مقامی ٹی وی اور ریڈیو چینلوں سے مذہبی پروگراموں کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے۔ لیکن یہ پہلا موقع ہے کہ وادی کی واحد نجی ایف ایم چنیل نے کسی علیٰحدگی پسند رہنما کو اسلامی تبلیغ کے سلسلہ وار پروگرام میں ایک ماہ کے لئے روزانہ مدعو کیا ہو۔

اس پروگرام میں میرواعظ مذہبی اور سماجی امور پر خطاب کرتے تھے اور نوجوانوں کو بے راہ روی سے باز رہنے کی نصیحت کرتے تھے۔ایف ایم کے مقامی سٹیشن سے وابستہ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ یہ پروگرام بہت مقبول ہورہا تھا۔

جمعرات کو میرواعظ عمرفاروق نے ایک بیان میں یہ دعوٰی کیا کہ ریڈیو سٹیشن سے انہیں بتایا گیا کہ حکومت نے اس پروگرام پر پابندی عائد کی ہے۔

اس پروگرام کا سلسلہ بند کئے جائے جانے پر میرواعظ عمر نے الزام عائد کیا ہے کہ اس پابندی کا مقصد کشمیریوں کو ان کی مذہبی اور تمدنی سرگرمیوں سے باز رکھنا ہے۔

انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ ’ اس بات سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ کشمیر میں اظہار رائے پر کس طرح کی پابندیاں ہیں۔ یہاں تو مذہبی حقوق بھی سلب کئے جارہے ہیں‘۔

سماجی اصلاح اور اسلامی تبلیغ کے اس پروگرام کو اچانک بند کرنے سے متعلق اس ریڈیو چینل کی نگران کمپنی ریلائنس کے حکام نے واضح کیا ہے کہ انہیں حکومت کی طرف سے کوئی دباؤ نہیں تھا ۔

کمپنی کی ایک ترجمان نے نام مخفی رکھنے کی شرط پر بتایا کہ میرواعظ عمر کے ساتھ پورے ایک ماہ تک مذہبی براڈکاسٹ کی بات طے ہوگئی تھی، لیکن بعد میں پروگرام میں تبدیلی لائی گئی۔ انہوں نے کہا ’ اس میں حکومت کا کوئی رول نہیں ہے‘۔

واضح رہے دسمبر دو ہزار چھ میں ریلائنس کیمونیکیشنز نے اپنے ایف ایم چینل بِگ نائنٹی ٹو پوانٹ سیون کے سرینگر سٹیشن کا افتتاح کیا تھا۔

یہاں سے معلومات اور تفریح کے درجنوں پروگرام نشر ہوتے ہیں جو نہایت مقبول ہیں۔ پچھلے پانچ سال میں یہاں منعقد ہونے والے کئی انتخابات کے دوران مختلف سیاسی گروپوں نے اسی ایف ایم چینل سے اپنی انتخابی مہم چلائی۔ گزشتہ برس کی ہمہ گیر احتجاجی تحریک کے بعد حکومت نے افواہوں اور تشدد کے خلاف اپنے مؤقف کی تشہیر بھی ایف ایم کے ذریعہ ہی کی۔

اسی بارے میں