بھارت پولیو کے خاتمے کے قریب پہنچ گیا

بھارت پولیو تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارت اب بھی دنیا کے ان چار ملکوں میں سے ایک ہے جہاں یہ بیماری ختم نہیں ہوئی ہے۔

بھارت کے وزیر برائے صحت غلام نبی آزاد نے پولیو کے عالمی دن پر کہا کہ انڈیا پولیو کے خاتمے کے جتنا قریب اب ہے اس سے پہلے کبھی نہیں تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ جب سے پولیو کے خاتمے کی عالمی مہم شروع ہوئی ہے اس کے بعد سے بھارت میں گزشتہ نو ماہ کے دوران پولیو کا ایک بھی کیس سامنے نہیں آیا اور یہ بھارت میں پولیو کی بیماری کے آثار نہ ملنے کا طویل ترین وقفہ ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس بیماری کا واحد کیس گزشتہ جنوری کے دوران مغربی بنگال سامنے آیا تھا۔ جب کہ دو ہزار دس کے دوران اسی مدت میں اس بیماری کے انتالیس کیسز رپورٹ ہوئے تھے۔

بھارت اب بھی دنیا کے ان چار ملکوں میں سے ایک ہے جہاں یہ بیماری ختم نہیں ہوئی ہے۔

وزیر صحت غلام نبی آزاد نے کہا ہے کہ ’ہم اس بیماری کے خاتمے کے قریب ہیں لیکن اس موقع پر بھی کوئی خطرح مول نہیں لینا چاہتے‘۔

وزیر صحت نے کہا کہ پولیو پر قابو پانے کی کوششیں مزید تیز کی جائیں گی۔

حکام کا کہنا ہے کہ اب پولیو کا جو کیس سامنے آئے گا اس کے ساتھ صحت عامہ کی ہنگامی بنیادوں پر نمٹا جائے گا۔

بھارت میں کئی دہائیوں سے سرکاری اور غیر سرکاری تنظیمیں بڑے پیمانے پر پولیو کے دفاع کی بھر پور کوششیں کر رہی ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ شمالی صوبے اتر پردیش سے گزشتہ اٹھارہ ماہ یا ڈیڑھ سال سے پولیو کا کو کیس سامنے نہیں آیا، جب کہ بہار کے صوبے میں پولیو کا آخری کیس تیرہ ماہ پہلے سامنے آیا تھا۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ بھارت جیسے ملک میں پولیو کے بارے میں یہ خبریں انتہائی حوصلہ افزا ہیں۔

اسی بارے میں