بھارت: شمالی علاقے شدید سردی کی لپیٹ میں

بھارت کے ذرائع ابلاغ کے مطابق ملک کے شمالی علاقوں میں سردی کی شدید لہر سے ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد انتالیس ہو گئی ہے۔

سردی کی حالیہ لہر میں سب سے زیادہ ہلاکتیں ریاست اترپردیش، پنجاب اور ہریانہ میں ہوئیں ہیں۔

ہلاک ہونے والوں میں زیادہ تر بے گھر افراد ہیں۔

گزشتہ ہفتے بھارت کی عدالت عظمیٰ نے حکومت کو حکم دیا تھا کہ سردیوں میں بے گھر افراد کو عارضی پناہ گاہیں فراہم کرے۔

شدید دھند کے سبب بھارت کے شمالی علاقوں میں معمولات زندگی بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں درجہ حرارت صفر سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اتوار کی رات سے اب تک ریاست اتر پردیش میں دو اور پنجاب میں نو افراد سردی کی شدت سے مر چکے ہیں۔

دارالحکومت دلّی بھی شدید سردی کی لپیٹ میں ہے اور درجہ حرارت دو اعشاریہ تین سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے اور یہاں دھند کی وجہ سے ہوائی ٹریفک کا معمول متاثر ہو رہا ہے۔

اطلاعات کے مطابق سردی کے سبب ریاست بہار میں سکول پچیس دسمبر تک بند کر دیے گئے ہیں۔

محکمہ موسمیات کے ایک اہلکار کے مطابق سردی کی حالیہ لہر آئندہ چند روز تک جاری رہے گی۔

اسی بارے میں