سکول ٹیچر کے اکاؤنٹ میں اربوں ڈالر

بھارت کی مغربی بنگال ریاست میں ایک سکول ٹیچر کو اس وقت دھچکا لگا جب ان کو یہ معلوم چلا کہ ان کے اکاؤنٹ میں 9.8 بلین ڈالر ہیں۔

سکول ٹیچر پریجت سہا اپنے بینک اکاؤنٹ میں دو سو ڈالر ٹراسفر ہونے کے انتظار میں تھے لیکن جب انہوں نے آن لائن بینکنگ سے اپنے اکاؤنٹ میں پڑی رقم دریافت کی تو وہ ششدر رہ گئے کہ ان کے اکاؤنٹ میں اربوں ڈالر موجود ہیں۔

پریجت نے سٹیٹ بینک آف انڈیا فون کر کے مطلع کیا۔ سٹیٹ بینک نے اس غلطی پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔ لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ رقم کلیئر نہیں ہوئی تھی اور اگر پریجت چاہتے بھی تو نہیں نکال سکتے تھے۔

پریجت کی ماہانہ تنخواہ سات سو ڈالر ہے۔ ’اتوار کی شام کو میں نے انٹرنیٹ پر جاکر اپنے بینک اکاؤنٹ کا بیلنس چیک کیا۔ میں اکاؤنٹ میں دو سو ڈالر کی توقع کر رہا تھا۔ لیکن اس کے جگہ میرے اکاؤنٹ میں اربوں ڈالر موجود تھے۔‘

پریجت نے کہا کہ انہوں نے اپنے دوست کو فون کیا جو ایک بینک میں کام کرتے ہیں اور مذاق کیا کہ بینک والوں کے پاس اضافی رقم آ گئی ہے۔

ریاستی بینک نے اس غلطی کی وضاحت کرنے سے انکار کردیا ہے۔

اسی بارے میں