گجرات، میلے میں بھگڈر سے چھ افراد ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption بھارت میں بھگدڑ کے بیشتر واقعات مذہبی تیہواروں میں پیش آتے ہیں

بھارتی ریاست گجرات میں ہندؤں کے ایک تیہوار مہا شیو راتری کی مناسبت سے بھاؤ ناتھ مندر میں منعقد میلے میں بھگدڑ مچنے سے چھ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

پولیس کے مطابق اس واقعے میں تین خواتین، دو بچے اور ایک مدر ہلاک ہوا ہے۔

یہ واقعہ ضلع جونا گڑھ میں پیش آیا ہے جس میں بیس دیگر افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق بعض زخمیوں کی حالت اب بھی نازک ہے۔

پولیس کے مطابق میلے میں ایک گاڑی کے بریک خراب ہونے کی افواہ پھیلنے کی وجہ سے بھگدڑ مچ گئي۔

مہا شیو راتری ہندؤں کا مقدس فیسٹیول ہے جس میں بھگوان شیو کی پوجا کی جاتی ہے۔ رات کے وقت شیو مندر میں اس تقریب کے لیے لاکھوں لوگ جمع ہوئے تھے۔

بھاؤناتھ مندر ریاست کے بڑے شہر راج کوٹ سے تقریبا ڈیڑھ سے کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ وزیر اعلی نریندر مودی نے اس واقعے کی تفتیش کے احکامات دیے ہیں۔

بھارت میں اس طرح کے مذہبی تہواروں کے دوران بھگڈر کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں جس میں ہر برس سینکڑوں لوگ ہلاک ہو جاتے ہیں۔

دو برس قبل گجرات کے ہی راج کوٹ میں ایک مندر میں بھگدڑ کا واقعہ پیش آیا تھا جس میں نو افراد ہلاک ہوئے تھے۔

گچھ ماہ قبل ریاست کیرالا کے سبری مالا مندر میں بھگدڑ کا ایسا ہی واقعہ پیش آیا تھا جس میں سو سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے۔

نومبر میں ہری دوار میں بھی ایک مذہبی تہوار کے دوران ہوئی بھگدڑ میں بیس افراد ہلاک ہوئے تھے۔

اسی بارے میں