بھارت میں سوائن فلو سے سات افراد ہلاک

سوائن فلو
Image caption سنہ 2009 میں سوائن فلو کی وجہ سے بھارت میں ساڑھے چار سو افراد ہلاک ہوئے تھے

بھارت کی ریاست مہاراشٹر کے شہر پونے میں گزشتہ دو ہفتے میں سوائن فلو کے باعث سات افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقامی ڈاکٹروں کے مطابق متعدد افراد اس وائرس سے متاثر ہیں۔

مقامی ہسپتال کے ڈاکٹروں نے ان اموات کی تصدیق ہے اور ان کا کہنا ہے کہ یہ ساری اموات پونے اور اس کے اطراف کے علاقوں میں پیش آئی ہیں۔

ڈاکٹروں کے مطابق ان اموات کے علاوہ کم از کم سو افراد اس وائرس کی زد میں ہیں۔ ان میں سے بیشتر کو ہسپتال میں داخل کرادیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ سنہ دوہزار نو میں بھارت میں سوائن فلو کی وبا پھیلی تھی اور اس وائرس کی وجہ سے ساڑھے چار سو سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے اور کم از کم تیرہ سو افراد وائرس سے متاثر ہوئے تھے۔

دو ہزار نو میں جن ریاستوں میں سوائن فلو کے سبب سب سے زیادہ اموات ہوئی تھیں ان میں مہاراشٹر، کرناٹک، اور گجرات شامل ہیں۔

پونے میں مقامی میڈیا کے مطابق سوائن فلو سے متاثر افراد کو ہسپتال لے جایا گیا ہے۔

پونے میں ایک مقامی صحافی کا کہنا ہے ’سوائن فلو سے متعلق لوگوں میں کوئی گھبراہٹ نہیں ہے لیکن اس وائرس سے متاثر روزانہ نئے مریض ہسپتال میں لائے جارہے ہیں۔‘

پونے کی نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف وائرولوجی کے ڈاکٹر اے سی مشرا نے انگریزی اخبار انڈین ایکسپریس کو بتایا ہے ’گزشتہ برس پوری دنیا میں سوائن فلو تیزی سے پھیلا تھا لیکن اس برس سوائن فلو کو چھوٹے موٹے معاملات سامنے آئے ہیں۔ یہ معاملات بھی ایسے ہی لگتے ہیں، وائرس پھیلے گا اور پھر جلد ہی ختم ہوجائے گا۔‘

سوائن فلو وائرس سے دنیا بھر میں بارہ سو سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں