پرنب مکھر جی کا سیاسی سفر

پرنب مکھرجی تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption پرنب مکھرجی بھارتی سیاست میں کافی اہمیت کے حامل رہے ہیں۔

بھارت میں حکمران اتحاد یو پی اے کے امیدوار پرنب مکھرجی بھارت کے تیرہویں صدر منتخب ہوگئے ہیں۔

وہ عہدۂ صدارت کے لیے نامزد کیے جانے سے قبل ملک کے وزیرِ خزانہ تھے۔

پرنب مکھرجی کا شمار ملک کے سب سے تجربہ کار سیاستدانوں میں کیا جاتا ہے اور وہ تقریباً چالیس برس سے پارلیمان کے رکن ہیں اور وزارتِ خزانہ سے قبل وہ دفاع، خارجہ، اور تجارت کی وزارتوں کی ذمہ داری بھی سنبھال چکے ہیں۔

پرنب مکھرجی کو حکومت میں دوسرا سب سے طاقتور مقام حاصل ہے اور انہیں یو پی اے کا ’چیف ٹربل شوٹر‘ یا ’مردِ بحران‘ کہا جاتا ہے یعنی جب بھی کوئی بحران ہوتا ہے تو صورتحال سے نمٹنے کے لیے ان کی خدمات حاصل کی جاتی ہیں۔

چھہتّر سالہ پرنب مکھرجی گیار دسمبر انیس سو پینتیس میں مغربی بنگال کے ضلع ویر بھوم میں پیدا ہوئے۔ انھوں نے تاریخ اور سیاسیات میں ایم کیا ہے۔

وہ انیس سو باون سے چونسٹھ کے دوران آل انڈیا کانگریس کمیٹی اور مغربی بنگال اسمبلی کے رکن اور ویر بھوم ضلع کانگریس کمیٹی کے صدر رہے۔

پرنب مکھرجی پہلی بار سن انیس سو انہتر میں راجیہ سبھا یعنی بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان بالا کے رکن منتخب ہوئے اورانیس سو تہتر میں انہیں پہلی مرتبہ مرکزی وزیر بنایا گیا۔

انہوں نے انیس سو چوراسی میں اندرا گاندھی کے قتل کے بعد پارٹی کو الوداع کہہ دیا تھا کیونکہ انہیں راجیو گاندھی نے اپنی کابینہ میں شامل نہیں کیا تھا۔

اس کے بعد انھوں نے راشٹریہ سماجوادی کانگریس کے نام سے اپنی علیحدہ پارٹی بھی بنا لی تھی لیکن پھر وزیراعظم پی وی نرسمہا راؤ نے ان پر پلاننگ کمیشن کے نائب کی ذمہ داری ڈال کر انھیں کانگریس کی مرکزی دھارے میں لا کھڑا کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption پرنب مکھرجی کو کانگریس پارٹی میں مرد بحران کی صورت دیکھا جا تا رہا ہے۔

پرنب مکھر جی کے والد بھارت کی تحریک آزادی کے مجاہدوں میں شامل ہیں جنھوں نے دس سال سے زیادہ عرصہ جیل میں گزارا اور انیس سو بیس کے بعد سے کانگریس کی تمام تحریکوں میں شامل رہے۔

مرکزی کابینہ میں

فروری1973 سے جنوری1974 تک مرکز میں جونیئر وزیر

جنوری 1974 سے اکتوبر 1974 تک نائب وزیر

اکتربر 1974 سے دسمبر1975 تک نائب وزیر خزانہ

دسمبر 1975 سے مارچ 1977 تک ٹیکس اور بینکنگ وزیر (آزاد ذمہ داری)

جنوری1980 سے جنوری 1982 تک وزیر کامرس

جنوری 1982 سے دسمبر 1984 تک مرکزی وزیر خزانہ

جنوری 1993 سے فروری 1995 تک وزیر کامرس

فروری 1995 سے مئی 1996 تک وزیر خارجہ

مئی 2004 سے اکتوبر 2006 تک وزیر دفاع

اکتوبر 2006 سے مئی 2009 تک وزیر خارجہ

جنوری 2009 سے تا حال وزیر خزانہ

اسی بارے میں