کشمیر:پاکستانی فوجی کو واپس ملک بھیج دیاگیا

لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوجی کی فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption فوج نے یہ واضح نہیں کیا ہے کہ عارف علی آخر کس غرض سے بھارتی کنٹرول والے علاقہ میں داخل ہوئے تھے۔

بھارت کے زیرِانتظام کشمیر میں کنٹرول لائن پار کرتے ہوئے گرفتار کئے گئے ایک پاکستانی فوجی کو پاکستانی حکام کے سپرد کردیا گیا ہے۔

جموں وادی میں مقیم فوجی ترجمان کرنل پالٹا نے بتایا کہ پاکستان کے اُنیس سالہ عارف علی بدھ کے روز پونچھ سیکٹر میں لائن آف کنٹرول عبور کر کے بھارتی علاقے میں داخل ہوگئے جس کے بعد انہیں گرفتار کیا گیا۔

عارف علی پاکستان کے شہر کوئٹہ کے رہائشی بشیر احمد کے بیٹے ہیں اور کچھ ہی عرصہ قبل فوج میں بھرتی ہوئے ہیں۔

کرنل پالٹا کے مطابق عارف علی بنا وردی کے اور غیر مسلح تھے۔ ان کی تحویل سے تیرہ ہزار تین سو روپے کی پاکستانی کرنسی کے علاوہ ’یوفون‘ اور دیگر ٹیلی کام کمپنیوں کے سِم کارڑز برآمد ہوئے ہیں۔

جمعے کو ترجمان کا کہنا تھا ’ان سے پوچھ گچھ کی گئی اور آج صبح یہ فیصلہ ہوا کہ انہیں واپس پاکستانی حکام کے سپرد کیا جائے گا۔‘

جموں کے ضلع پونچھ سے ذرائع نے بتایا کہ بھارتی فوجی حکام نے پاکستانی فوج کے ساتھ رابطہ کر کے اس بات پر اتفاق کر لیا تھا کہ عارف علی کو چکاندا باغ تجارتی مرکز ، جو کنٹرول لائن پر پچھلے چار سال سے قائم ہے، کے ذریعہ واپس بھیج دیا جائے گا۔ واپسی کا عمل صبح دس بجے شروع ہوا ۔ میڈیا عملہ کو دو سو گز کی دُوری سے یہ منظردیکھنے کا موقعہ دیا گیا۔

یہ پوچھنے پر کہ عارف علی نے کنٹرول لائن کو کس مقصد سے عبور کیا تھا، فوجی ترجمان نے بتایا:’جب واپس بھیجا جارہا ہے، تو ظاہر ہے یہ معلوم ہوا ہوگا کہ وہ کسی تخریبی مقصد سے نہیں آئے تھے۔‘

بعض میڈیا اطلاعات میں ذرائع کا حوالہ دے کر بتایا گیا کہ عارف علی کا پونچھ میں کسی خاتون کے ساتھ معاشقہ چل رہا تھا اور اسی سے ملاقات کی غرض سے انہوں نے سرحد عبور کرلی۔ ان کی پوچھ گچھ کرچکے فوجی اہلکاروں نے ان رپورٹوں کو 'میڈیا کی اٹکلیں' بتایا۔ تاہم فوج نے یہ واضح نہیں کیا ہے کہ عارف علی آخر کس غرض سے بھارتی کنٹرول والے علاقہ میں داخل ہوئے تھے۔

قابل ذکر ہے کہ پچھلے سال اکتوبر میں بھارتی فوج کا ایک ہیلی کاپٹر جس میں چار فوجی افسر سوار تھے، پاکستانی علاقہ میں داخل ہوا تو پاکستانی حکام نے ہیلی کاپٹر اور فوجی افسروں کو واپس بھارتی حکام کے سپرد کیا۔

اسی بارے میں