بھارت:ٹریفک حادثے میں انتیس ہلاک

سڑک حادثہ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارت میں سڑک حادثۓ اموات کے بڑے سبب ہیں۔

بھارت کے دارالحکومت دلّی کے نزدیک ریاست ہریانہ میں سوموار کو سڑک کے ایک بڑے حادثے میں کم سے کم انتیس افراد ہلاک جبکہ پینتالیس افراد زخمی ہوئے ہیں۔

مرنے والوں میں دس عورتیں، تین بچے اور سولہ مرد شامل ہیں۔

یہ حادثہ ہریانہ کے ضلعی ہیڈکوارٹر بھیوانی سے ساٹھ کلومیٹر کے فاصلے پر راج گڑھ حصار روڈ پر اس وقت ہوا جب ایک بس ایک ٹرک سے ٹکرا گئی۔

ہلاک شدگان بھارتی ریاست راجستھان کے امرپورہ گاؤں میں واقع گھوگھا ماری مندر کے درشن سے لوٹ رہے تھے۔

بھوانی کے ایس پی ستیش بالن نے بتایا کہ ہلاک ہونے والوں کا تعلق جند ضلع کے کلایت اور کیتھل ضلع کے دوسرے گاؤں سے ہے۔

انھوں نے بتایا کہ بائیس افراد تو جائے حادثہ پر ہی ہلاک ہو گئے تھے جبکہ سات لوگوں نے ہسپتال جاتے ہوئے راستے میں دم توڑ دیا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ یہ لاری زائرین سے کھچاکھچ بھری ہوئی تھی اور پلنگ ڈال کر اسے دو منزلہ بنایا گیاتھا تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ اس میں سفر کر سکیں۔

ہریانہ کے وزیر اعلی بھوپندر سنگھ ہوڈا اور حزب اختلاف کے رہنما اوم پرکاش چوٹالا نے حادثے پر افسوس کا اظہار کیا ہے اور ورثاء سے ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق وزیر اعلی نے کروکشیتر کا اپنا دورہ منسوخ کر دیا ہے اور حصار کے لیے روانہ ہو گئے ہیں۔

اسی بارے میں