بھارت:ٹرین کی بوگی میں آتشزدگی، 47 ہلاک

بھارتی ریل (فائل فوٹو) تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption بھارت میں ریلویز آمدورفت کا اہم وسیلہ ہے۔

پیر کو بھارت کے دارالحکومت دلی سے چنئی جانے والی ریل گاڑی تمل ناڈو ایکسپریس کے ایک ڈبے میں آگ لگ جانے سے کم از کم سینتالیس مسافرہلاک جبکہ اٹھائیس زخمی ہو گئے ہیں۔

یہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب یہ ریل گاڑی جنوبی ریاست آندھرا پردیش کے نیلّور سٹیشن سے روانہ ہوئی۔

حیدرآباد سے بی بی سی کے نمائندے عمر فاروق نے بتایا ہے کہ ریلوے اہلکار امدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں اور زخمیوں کو مقامی ہسپتال لے جایا گیا ہے۔

ریلوے کے ڈویژنل منیجر انیل کمار نے اس حادثے میں سینتالیس افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

نیلّور کے ضلعی کلکٹر بی شریدھر نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ یہ حادثہ گاڑی میں بجلی کے نظام میں شارٹ سرکٹ کی وجہ سے ہوا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ جس ڈبے میں آگ لگی اس میں ستّر سے زیادہ افراد سوار تھے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جب ریل گاڑی نیلّور سٹیشن سے روانہ ہو رہی تھی تو وہاں کے ریلوے ملازمین نے مخصوص ڈبے میں آگ لگتی دیکھی اور فورا ہی گاڑی کو روک لیا گیا۔

اس کے ساتھ ہی آگ بجھانے والی امدادی ٹیموں کو بلایا گیا لیکن ان کی آمد تک ایک ڈبہ پوری طرح آگ کی زد میں آ چکا تھا۔ دوسرے ڈبوں تک آگ پھیلنے سے روکنے کے لیے ڈبے کو ریل گاڑی کے دیگر ڈبوں سے کاٹ کر الگ کر دیا گیا تھا۔

ضلعی کلکٹر اور ضلع ایس پی سمیت سرکاری امدادی عملے کے اہلکار جائے حادثہ پہنچ گئے ہیں اور امدادی کام جاری ہے۔

اسی بارے میں