ملازم کے الزام کے بعد وزیر مستعفی

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption گيتیکا شرما بھارت کی ایک ایئر لائن ایم ڈی ایل آر میں کام کرتی تھیں

بھارت کی ریاست ہریانہ کے ایک وزیر گوپال کانڈا نے خود کشی کرنے والی ایک ایئر ہاسٹس کے آخری خط میں اپنا نام آنے کے بعد، اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا ہے۔

تئیس سالہ گيتیکا شرما نے دلی میں اپنی رہائش گاہ پر سنیچر کے روز خود کشی کر لی تھی اور خود کشی سے پہلے چھوڑے آخری خط میں انہوں نے ہریانہ کے وزیرگوپال کانڈا کو خود کشی کے لیے ذمہ دار ٹھہرایا۔ دلی پولیس نے اس سلسلے میں گوپال کانڈا کے خلاف ایک مقدمہ بھی درج کیا ہے۔

گوپال کانڈا نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اس لیے استعفیٰ دیا ہے تاکہ تفتیش میں کوئی رخنہ اندازی نہ ہو۔

انہوں نے کہا ’ان الزامات کی کوئی بنیاد نہیں ہے۔ مجھے نہیں پتہ یہ سب کیسے ہوا اور تفتیش سے بات واضح ہوجائیگي۔ وہ کہتے ہیں کہ ’اُن کا کہنا ہے کہ میں نے انہیں ہراساں کیا ہے لیکن میرے ملازمین سے براہ راست میرا کوئی تعلق نہیں رہا ہے‘۔

گوپال کانڈا ریاست ہریانہ میں وزیر برائے امور داخلہ تھے اور کانگریس پارٹی میں ان کا بڑا اثر و رسوخ مانا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ گيتیکا شرما بھارت کی ایک ایئر لائن ایم ڈی ایل آر میں کام کرتی تھیں اور اس ایئر لائن کے مالک گوپال کانڈا تھے۔ ایئر لائن خسارے کے سبب بند کر دی گئی تھی۔

گيتیکا نے اپنے خود کشی کے نوٹ میں لکھا ’میں اندر سے ٹوٹ چکی ہوں اس لیے خود کشی کر رہی ہوں، میرا اعتماد پارہ پارہ ہوچکا ہے اور میرے ساتھ دھوکا ہوا ہے۔ میری موت کے ذمہ دار دو افراد ہیں، ارونا چڈھا اور گوپال گوئیل کانڈا‘۔

اس نوٹ کے مطابق ’دونوں نے میرا اعتماد توڑا اور اپنے فائدے کے لیے مجھے استعمال کیا۔ میری زندگی برباد کردی اور اب وہ میرے گھر والوں کے پیچھے پڑے ہیں‘۔

گیتیکا کے اہل خانہ کا الزام ہے کہ جب گوپال کانڈا کی ایئر لائن بند ہوگئی تو گيتیکا نے امارت ایئر لائن میں کام شروع کیا تھا لیکن انہوں نے اپنے اثر و رسوخ سے گیتیکا کو وہاں سے بھی نکلوا دیا اور پھر اپنی کمپنی میں دوبارہ کام کی پیشکش کی۔

جب انہوں نے گوپال کانڈا کی کمپنی میں دوبارہ کام شروع کیا تو وہاں ان کا استحصال ہوا اور ان پر ’ذہنی تشدد‘ کیا گیا۔

ہریانہ کے وزیر اعلیٰ بھوپیندر سنگھ ہوڈا کا کہنا ہے کہ وہ اس واقعے کی تفصیلات پتہ کر رہے ہیں۔ انہوں نے اس معاملے میں کارروائی کا بھی وعدہ کیا ہے۔

اسی بارے میں