بھارت، پانی میں ستیہ گرہ سے کسانوں کی جیت

آخری وقت اشاعت:  پير 10 ستمبر 2012 ,‭ 12:51 GMT 17:51 PST
پانی میں احتجاج

گاؤں کے کسانوں نے پانی میں سترہ روز کھڑے رہ کر احتجاج کیا

بھارت کی ریاست مدھیہ پردیش کی حکومت نے گزشتہ سترہ روز سے گردن تک پانی میں کھڑے ہو کر احتجاج کرنے والے کسانوں کے مطالبات تسلیم کر لیے ہیں۔

ریاست کے کھنڈوا ضلع میں کسان اوم کاریشور باندھ کے پانی کی سطح کو نیچا کرنے اور ڈیم کے سبب ان کی جو زمین پانی میں ڈوب گئی تھیں اس کے معاوضہ کا مطالبہ کر رہے تھے۔

اس کے لیے گاؤں کے کسانوں نے ایک نئے انداز کا احتجاج شروع کیا۔ مرد و خواتین کاشتکاروں اور بعض غیر سرکاری تنظیموں کے کارکنان نے اس کے لیے گردن تک گہرے پانی میں کھڑے ہو کر احتجاج شروع کیا۔

اس کا نام جل ستیہ گرہ یعنی پانی کی ستیہ گرہ رکھا گیا اور حکومت نے مستقل سترہ روز کے پانی کے اس احتجاج کے بعد ان کے مطالبات تسلیم کر لیے ہیں۔

پیر کے روز ریاست کے وزیر اعلی شیو راج سنگھ چوہان نے اعلان کیا کہ ان کی حکومت نے مطالبات تسلیم کرتے ہوئے کارروائی کے لیے ایک کمیٹی بھی تشکیل دینے کا حکم دیا ہے۔

ان کا کہنا تھا ’موجودہ حالات کے پیش نظر ریاستی حکومت نے ڈیم کے پانی کی سطح کو کم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس باندھ سے جو کسان متاثر ہوئے ہیں انہیں معاوضہ دینے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔‘

"موجودہ حالات کے پیش نظر ریاستی حکومت نے ڈیم کے پانی کی سطح کو کم کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس باندھ سے جو کسان متاثر ہوئے ہیں انہیں معاوضہ دینے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔"

شیو راج سنگھ چوہان

مسٹر چوہان نے کہا کہ جن کسانوں کی زمین چلی گئی ہے یا پھر متاثر ہوئی ہے تو انہیں اس کے بدلے میں دوسری جگہ زمین فراہم کی جائے گي۔

اوم کاریشور ڈیم بجلی کی پیداوار کے لیے ایک بڑا پروجیکٹ ہے اور اس کی تعمیر سے علاقے کے بہت سے کسان متاثر ہوئے ہیں۔

پانی کی سطح اونچی ہونے سے جہاں بہت سے کاشتکاروں کی اراضی ڈوب گئی ہیں وہیں بہت سے دیہات بھی اس کی زد میں آئے ہیں۔

حکومت نے متاثرین سے بہت سے وعدے کیے تھے لیکن اس پر ابھی تک عمل نہیں ہوا ہے۔ جل ستیہ گرہ کرنے والے کسانوں سے ملنے کے لیے مرکزی حکومت نے ایک وفد بھیجنے کا اعلان کیا تھا۔

لیکن اس سے پہلے ہی ریاست کی بی جے پی کی حکومت نے ان کے مطالبات تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا۔

اسی بارے میں

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔