بھارت: ڈیزل قیمتوں میں چودہ فی صد اضافہ

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 14 ستمبر 2012 ,‭ 07:01 GMT 12:01 PST
بھارت ڈیزل

بھارت میں ڈیزل کی قیمتوں میں چودہ فیصد اضافے کا اعلان کیا گیا ہے

بھارت میں ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کیا گیا ہے۔ یہ اقدام ملک کے بجٹ خسارے کو کم کرنے کے پیش نظر کیا گیا ہے۔

بھارتی حکومت کا کہنا ہے کہ جمعے سے ڈیزل کی قیمتوں میں چودہ فی صد کا اضافہ کیا جائے گا۔

حکومت کا کہنا ہے کہ کھانا پکانے کی گیس پر دی جانے والی رعایت میں بھی کمی کی جا رہی ہے اور اب سال میں فی صارف چھ گیس سلنڈر ہی رعایتی قیمتوں پر دیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ حکومت غریبوں کی مدد اور مہنگائی پر قابو پانے کے لیے ڈیزل، کھانا پکانے کی گیس اور مٹی کے تیل پر رعایت دیتی رہی ہے۔

کہا جاتا ہے کہ بجٹ کا خسارہ انہی مرعات کا نتیجہ ہے اور یہ خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ حکومت کی جانب سے دی جانے والی ان رعایتوں کے نتیجے میں ہندوستان کی مجموعی ترقی کی رفتار کو نقصان پہنچ رہا ہے۔

حکومت پر رعایات میں کٹوتی کرنے اور بجٹ کے خسارے کو کم کرنے کے لیے بہت دباؤ ہے۔

ایچ ایس بی سی میں قیمتوں کے شعبے کے سربراہ منیش وادھوا کا کہنا ہے کہ ’حکومت کی طرف سے مالی استحکام کی جانب یہ پہلا اہم قدم ہے۔ اور کاروباری دنیا کافی دنوں سے اس کی منتظر تھی‘۔

حالیہ دنوں میں بھارت کی معیشت کی ترقی کی رفتار مدھم پڑ گئی ہے اور خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ بڑھتی مہنگائی اور بڑھتے خسارے سے ملک میں سرمایہ کاری کو نقصان پہنچے گا۔

اس سے قبل اسی سال سٹینڈرڈ اینڈ پوئر ریٹنگ ایجنسی نے کہا تھا کہ اگر بھارت کے حالات میں بہتری نہیں آتی تو بھارت کی کریڈٹ ریٹنگ گر جائے گی۔

واضح رہے کہ اسی سال جون میں ایک دوسری کریڈٹ ریٹنگ ایجنسی فش نے بھارت کی کریڈٹ ریٹنگ کو منفی کر دیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔