سکھ انتہاپسند حملے کے ذمہ دار:جنرل برار

آخری وقت اشاعت:  منگل 2 اکتوبر 2012 ,‭ 18:43 GMT 23:43 PST

جنرل برار ایک نجی دورے پر لندن آئے تھے

لندن میں قاتلانہ حملے میں زخمی ہونے والے سابق بھارتی جنرل کلدیپ برار کا کہنا ہے کہ ان پر حملہ نفرت کے نتیجے میں کیا جانے والا جرم تھا اور سکھ انتہا پسند اس حملے کے ذمہ دار ہیں۔

لیفٹیننٹ جنرل( ر) کلدیپ برار نے کہا کہ ان پر اور ان کی اہلیہ پر جنوبی ایشیائی قومیت کے چار باریش افراد نے حملہ کیا تھا اور ان کی کمر اور گردن پر چاقو سے وار کیے تھے۔

جنرل کلدیپ انیس سو چوراسی میں سکھوں کے مقدس ترین مقام گولڈن ٹیمپل میں موجود سکھ شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کے کمانڈر تھے۔

اس سے قبل لندن میں پولیس حکام نے اس کارروائی کو قاتلانہ حملہ قرار دیا تھا۔

لندن پولیس نے زخمی کا نام بتائے بغیر حملے کی تصدیق کی تھی کہ لندن میں اتوار کی رات ستّر سال سے زیادہ عمر کے ایک شخص پر چاقو سے حملہ ہوا۔

لندن کی میٹروپولیٹن پولیس نے بی بی سی کو بتایا کہ تیس ستمبر کی رات دس بج کر چالیس منٹ پر اولڈ کیوبک سٹریٹ میں ایک شخص پر حملہ ہوا جس کے بعد مقامی پولیس افسران اور ایمبولنس جائے حادثہ پر پہنچ گئی۔

بھارتی ہائی کمیشن نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ جنرل برار پر چار افراد نے حملہ کیا۔ ہائی کمیشن کے حکام کے مطابق ابھی یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ حملہ کس نے کیا اور اس کے پیچھے کیا مقصد تھا۔

لندن پولیس کے مطابق اس سلسلے میں ابھی کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے ۔

گولڈن ٹیمپل سکھوں کا مقدس ترین مذہبی مقام ہے

ہائی کمیشن نے بتایا کہ جنرل برار ایک نجی دورے پر لندن آئے تھے اور ابتدائی علاج کے بعد انہیں ہسپتال سے فارغ کر دیا گیا ہے۔

امرتسر کے گولڈن ٹیمپل میں چھپے شدت پسندوں کے خلاف آپریشن بلیو سٹار کی قیادت جنرل کلدیپ برار نے ہی کی تھی۔

جرنیل سنگھ بھنڈراوالا کی قیادت میں شدت پسند سکھ ایک الگ ریاست خالصتان کا مطالبہ کر رہے تھے اور اس کارروائی میں بھنڈروالا کو مار دیا گیا تھا۔

اسی آپریشن کے بعد 1984 میں اس وقت کی بھارتی وزیرِاعظم اندرا گاندھی کو ان کے سکھ محافظین نے قتل کر دیا تھا۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔