گجرات اور ہماچل کے انتخابات کی تاریخوں کا اعلان

آخری وقت اشاعت:  بدھ 3 اکتوبر 2012 ,‭ 13:56 GMT 18:56 PST

نریندر مودی کا بطور وزیر اعلی یہ تیسرا الیکشن ہوگا

بھارتی ریاست گجرات میں اسمبلی کے انتخابات تیرہ اور سترہ دسمبر کو ہوں گے جبکہ ریاست ہماچل پردیش میں چار نومبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے۔

بدھ کو بھارتی انتخابی کمیشن نے ان تاریخوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ووٹوں کی گنتی بیس دسمبر کو کی جائےگی اور اسی روز نتائج آنے کی توقع ہے۔

ان تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی دونوں ریاستوں میں انتخابی ضابطہ اخلاق کا نفاذ ہوگیا ہے۔

چیف الیکشن کمشنر وی ایس پنت نے دلی میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران کہا کہ ریاست ہماچل پردیش میں انتخابات کے لیے دس اکتوبر کو نوٹیفکیشن جاری کیا جائےگا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہماچل پردیش کے اسبملی انتخابات کے لیے پرچہ نامزدگي داخل کرنے کی آخری تاریخ سترہ اکتوبر ہوگی جبکہ جانچ پڑتال کا کام اٹھارہ اکتوبر کو ہوگا اور نام واپس لینے کی تاریخ بیس اکتوبر مقرر کی گئی ہے۔

گجرات میں دو مرحلے میں انتخابات کرائے جائیں گے۔ پہلے مرحلے میں تیرہ دسمبر کو پولنگ ہوگي جبکہ سترہ دسمبر کو دوسرے مرحلے کے لیے پولنگ ہوگی۔

ریاست گجرات میں اسمبلی کی کل ایک سو بیاسی نشستیں ہیں اور تقریبا چار کروڑ رائے دہندگان ہیں۔

گجرات میں نریندر مودی کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت ہے جہاں وہ مستقل تین بار انتخابات جیت چکے ہیں۔

ریاست ہماچل پردیش میں بھی بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت ہے۔ اس ریاست میں اڑسٹھ نشستیں ہیں اور بی جے پی نے ان تاریخوں کے اعلان کے بعد اپنے پہلے رد عمل میں کہا ہے کہ وہ اپنی اچھی طرز حکومت کی بنیاد پھر سے وہاں کامیابی حاصل کرےگی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔