رابرٹ واڈرا کی تفتیش، افسر کا تبادلہ

آخری وقت اشاعت:  منگل 16 اکتوبر 2012 ,‭ 12:12 GMT 17:12 PST
اشوک کھیمکا

اشوک کھیمکا نے اپنے تبادلے کو غلط بتایا ہے

بھارتی ریاست ہریانہ کی حکومت نے اس افسر کا تبادلہ کر دیا ہے جس نے سونیا گاندھی کے داماد رابرٹ واڈرا اور تعمیراتی کمپنی ڈی ایل ایف کے درمیان ہوئے اراضی کے معاہدوں کی تفتیش کا حکم دیا تھا۔

کرپشن کے خلاف مہم چلانے والی تنظیم انڈیا اگینسٹ کرپشن نے رابرٹ واڈرا پر تجارتی لین دین میں بدعنوانی کا الزام عائد کیا تھا۔

تنظیم کا کہنا ہے کہ ہریانہ میں کانگریس پارٹی کی حکومت ہے اور رابرٹ واڈرا نے ڈی ایل ایف کے ساتھ تجارتی مفاد کے لیے اثر و رسوخ کا بیجا استعمال کیا۔

ریاست کے ایک سینیئر افسر اشوک کھیمکا نے زمین کے ایک ایسے ہی لین دین معاملے کی تفتیش کا حکم دیا تھا جن کا تبادلہ کر دیا گیا ہے۔

لیکن اشوک کھیمکا نے بھی اپنا عہدہ چھوڑنے سے پہلے رابرٹ واڈرا کے ایک پلاٹ کے میوٹیشن کو کالعدم قرار دیا۔

ادھر ہریانہ کی حکومت کا کہنا ہے کہ یہ تبادلہ معمول کی کارروائی ہے اور کسی دباؤ کے تحت ان کا ٹرانسفر نہیں کیا گيا ہے۔

رابرٹ واڈرا

کانگریس پارٹی نے سونیا گاندھی کے داماد کا دفاع کیا ہے

اطلاعات کے مطابق دو ہزار آٹھ میں ہریانہ کی حکومت نے مذکورہ پلاٹ پر رابرٹ واڈرا کو ہاؤسنگ کلونی تعمیر کرنے کی اجازت دی تھی لیکن مسٹر واڈرا نے دو ماہ بعد ہی اسے ڈی ایل ایف کو بیچ دیا تھا۔

بی بی سی سے بات چيت میں اشوک کھیمکا نے یہ تو نہیں کہا کہ ان کا تبادلہ اسی وجہ سے ہوا ہے لیکن ان کا کہنا تھا کہ انہیں بہت بار ٹرانسفر کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا ’یہ تو تبادلہ کرنے والے حکام ہی بتا سکتے ہیں کہ میرے تبادلہ کی کیا وجہ ہے میں اس بارے میں اندازہ کیوں لگاؤں لیکن اس سے حوصلہ شکنی ہوتی ہے اور میں بے عزتی محسوس کرتا ہوں۔‘

اشوک کھمیکا نے بی بی سی سے بات چیت میں کہا کہ ان کا کئی بار تبادلہ کیا جا چکا ہے جس سے وہ کافی پریشان ہیں اور اس سے ان کے اہل خانہ بھی متاثر ہوتے ہیں۔

ہریانہ کیڈر کے سنہ انیس سو اکانوے کے آئی ایس آئی افسر اشوک کھمیکا کی عمر سینتالیس برس کی ہے اور ان کے بیس برس کے کریئر میں ان کا اکتالیس بار تبادلہ ہوچکا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ یہ تبادلہ عہدہ سنبھالنے کے اسّی روز بعد ہی کر دیا گيا جبکہ اصولی طور پر دو برس کے بعد کسی افسر کو ہٹایا جا تا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔