مشکلات سے دوچار کانگریس کا اہم اجلاس

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 9 نومبر 2012 ,‭ 09:11 GMT 14:11 PST

کانگریس کی ایک روزہ اجلاس میں پارٹی کے سبھی بڑے رہنما شریک ہیں

بھارت کی حکمراں جماعت کانگریس کے سینیئر رہنما مستقبل کی حکمت عملی پر غور و فکر کے لیے دلی سے متصل سورج کنڈ میں ایک اہم اجلاس میں شریک ہیں۔

جمعہ کی صبح کانگریس کی صدر سونیا گاندھی اور راہول گاندھی دیگر رہنماؤں کے ساتھ ایک بس کے ذریعے سورج کنڈ پہنچے۔

وزیراعظم منموہن سنگھ اور کانگریس سے تعلق رکھنے والے کابینہ کے ارکان بھی اس اجلاس میں حصہ لے رہے ہیں لیکن سکیورٹی وجوہات کی وجہ سے منموہن سنگھ نے بس پر سفر نہیں کیا۔

دلی سے متصل ہریانہ کے سورج کنڈ میں یہ اجلاس ایک ایسے وقت میں ہو رہا ہے جب کانگریس پارٹی کو سیاسی اور اقتصادی پالیسیوں کی وجہ سے سخت مشکلات کاسامنا ہے۔

اس ایک روزہ اجلاس میں کانگریس مختلف پالیسیوں کے حوالے سے حکومت اور پارٹی کے درمیان اختلافات کو دور کرنے کی کوشش کرے گی۔

یہ بھی امکان ہے کہ کانگرس کے رہنما مستقبل کی حکمت عملی طے کرنے کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کریں گے۔

بھارت کی حکمراں جماعت کانگریس کے بعض وزراء پر بدعنوانی کے الزامات لگتے رہے ہیں اور اب عام تاثر یہ ہے کہ موجودہ حکومت غیر موثر ہوچکی ہے۔

منموہن سنگھ کی حکومت نے حال ہی میں کئی متنازع اقتصادی فیصلے کیے جس کی وجہ سے اس کی اتحادی جماعتیں بھی اس سے خوش نہیں ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔