بہار میں غیرت کے نام پر تین قتل

آخری وقت اشاعت:  پير 19 نومبر 2012 ,‭ 13:03 GMT 18:03 PST
غیرت کے نام پر قتل

بھارت کی شمال مشرقی ریاست بہار میں غیرت کے نام پر قتل کا ایک واقعہ سامنے آیا ہے۔

بہار پولیس نے پیر کو کہا ہے کہ دو بچوں سمیت ایک شخص کو قتل کر دیا گیا ہے جبکہ اس شخص کی اہلیہ شدید زخمی ہے۔

یہ واقعہ ریاست کے دارالحکومت پٹنہ سے ڈھیڑ سو کلومیٹر کے فاصلے پر کیمور ضلع کے موہنیا گاؤں میں پیش آیا ہے۔

خبروں میں کہا جا رہا ہے کہ اٹھائیس سالہ دینارو بیند کو اتوار کی شام کو گولی مار دی گئی جبکہ اس کی تین سالہ بیٹی اور سات ماہ کے بیٹے کا گلا کاٹ کر قتل کر دیا گیا۔

دینارو کی اہلیہ رینا دیوی کا بھی گلا کاٹ دیا گیا ہے اور وہ ہسپتال میں زندگی اور موت کی کشمکش میں ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے کہ رینا نے اپنے والدین کی مرضی کے خلاف چار سال قبل بھاگ کر شادی کی تھی۔ دونوں حال ہی میں دو ماہ قبل گاؤں واپس لوٹے تھے۔

کیمور ضلعے کے پولیس اہلکار نے کہا ہے کہ رینا کے والد اور ان کے بھائیوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور پولیس نے انھیں حراست میں لے لیا ہے۔

گزشتہ مہینوں میں ریاست میں غیرت کے نام پر قتل کے کئی واقعات درج کیے گئے ہیں۔

اسی سال اگست کے مہینے میں پٹنہ کے نزدیک ایک شخص نے اپنی بہن اور اس کی چھوٹی بچی کو مار ڈالا تھا اور ان کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے کرکے گنگا ندی میں بہا دیا تھا۔

اور اس قتل کی بھی وجہ یہی تھی کہ اس کی بہن نے خاندان کی مرضی کے خلاف شادی کی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔