بھارت: غریبوں کو رعایتی رقم دینے پر سوال

آخری وقت اشاعت:  پير 3 دسمبر 2012 ,‭ 09:14 GMT 14:14 PST
بھارت میں ایک غریب بچے کی تصویر

حکومت کا ماننا ہے کہ نئی سکیم کے تحت حکومت کی جانب سے دی جانے والی سبسڈی کا غریبوں کو براہ راست فائدہ ہونا چاہیے

بھارتی انتخابی کمیشن نے حکومت سے اس منصوبے پر وضاحت طلب کی ہے جس کے تحت یکم جنوری سے ملک میں غریبوں کو دی جانے والی سبسڈی براہ راست رقم کے طور پر ان کے بینک اکاؤنٹس میں جمع ہو جائے گی۔

واضح رہے کہ انتخابی کمیشن نے یہ قدم حزب اختلاف کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی جانب سے احتجاج کے بعد اٹھایا ہے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کا کہنا ہے کہ حکومت نے یہ اعلان گجرات اور ہماچل پردیش میں انتخابات کے وقت کیا ہے جو کہ انتخابی ضوابط کی خلاف ورزی ہے۔

بھارتی جنتا پارٹی نے انتخابی کمیشن کو لکھے خط میں کہا ہے کہ ’حکومت کی جانب سے نیا فیصلہ گجرات میں ووٹروں کو اپنی طرف راغب کرنے کی شاطرانہ نیت سے کیا گیا ہے۔‘

واضح رہے کہ ریاست ہماچل پردیش میں نومبر میں اسمبلی انتخابات ہوئے ہیں اور گجرات میں اس ماہ کی تیرہ اور سترہ تاریخ کو اسمبلی انتخابات کے لیے ووٹنگ ہونی ہے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی نے انتخابی کمیشن کو اس بارے میں خط لکھ کر کہا تھا کہ حکومت اس فیصلہ کو تب تک کے لیے واپس جب تک ان ریاستوں میں انتخابات کا عمل مکمل نہ ہوجائے۔

ریاست گجرات میں سترہ دسمبر کو آخری مرحلے کی ووٹنگ مکمل ہوجائے گی اور تین دن بعد ووٹوں کی گنتی شروع ہوگی جس میں وزیر اعلی نریندر مودی کی قسمت کا فیصلہ ہونا ہے۔

انتخابی کمیشن نے حکومت کو جواب دینے کے لیے پیر کی شام تک کا وقت دیا ہے اور اگر وہ ایسا کرنے میں ناکام رہتی ہے تو اس کے لیے خلاف ’کارروائی‘ کی جائے گی۔

واضح رہے کہ حکومت کے نئے منصوبے کے تحت سولہ ریاستوں میں رہنے والے غریب افراد کے لیے پینشن اور سکولرشپس کی پچیس فلاحی سکیموں کے تحت دی جانے والے رقم براہ راست ان کے بینک اکاؤنٹس میں جمع ہو جائے گی۔

اگر حکومت کا یہ منصوبہ کامیاب ثابت ہوتا ہے تو سنہ دو ہزار تیرہ تک یہ سکیم پورے ملک میں نافذ کردی جائے گی۔

اہلکاروں کا کہنا ہے کہ حکومت کا یہ منصوبہ ملک میں غربت کے خاتمے کے لیے اہم قدم ہوسکتا ہے اور ملک کے غرباء کو قومی دھارے میں لایا جا سکتا ہے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔