بھارت: وزیر ریل اور وزیر قانون کے استعفے

پون کمار بنسل اور اشونی کمار
Image caption پون کمار بنسل اور اشونی کمار نے اپنے عہدے سے استعفی دے دیا

بھارت کے دو مرکزی وزیروں نے گھپلوں کے الزامات کے درمیان گزشتہ روز استعفیٰ دے دیا ہے جس سے برسر اقتدار جماعت کانگریس مزید بحران کا شکار ہو گئی ہے۔

ریلوے کے وزیر پون کمار بنسل اور کوئلہ گھوٹالے میں سی بی آئی رپورٹ سے مبینہ طور پر چھیڑ چھاڑ کے الزام میں پھنسے وزیر قانون اشونی کمار نے روز افزوں دباؤ کے درمیان بالآخر جمعہ کی شام استعفیٰ دے دیا۔

پون کمار بنسل اور اشونی کمار نے دو مختلف الزامات کے لیے استعفیٰ دیا ہے۔

ریلوے کے وزیر نے اس وقت استعفی دیا جب پولیس نے ان کے بھتیجے وجے سنگلا کو رشوت کے الزام میں گرفتار کیا جبکہ وزیر قانون اشونی کمار پر یہ الزام ہے کہ انھوں نے کوئلہ گھپلے کی رپورٹ کو متاثر کرنے کی کوشش کی۔

واضح رہے کہ بھارت کی عدالت عظمی یعنی سپریم کورٹ نے حکومت ہند پر کوئلہ گھپلے میں جاری تفتیش میں دخل اندازی کا الزام لگایا تھا جس کے ایک دن بعد اشونی کمار نے اپنا استعفیٰ دیا ہے۔

آڈیٹروں کے مطابق سستے داموں پر کوئلے کی کانوں کو حکومت کے ذریعے فروخت کیے جانے سے ملک کو 210 ارب ڈالر کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔

دونوں وزراء کے استعفے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے بی جے پی لیڈر شاہنواز حسین نے کہا کہ یہ استعفے حزب اختلاف اور میڈیا کے دباؤ میں دیے گئے ہیں۔ شاہنواز حسین نے کہا کہ، ’یہ دیر سے اٹھایا گیا درست قدم ہے۔‘

خبروں کے مطابق کانگریس رہنماؤں نے رات اس بحران سے نمٹنے کے لیے ہنگامی میٹنگ بھی کی ہے۔

خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق بنسل نے خود ہی اپنے استعفے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ’میں نے استعفی دے دیا ہے۔‘

Image caption پون کمار بنسل کے بھتیجے کو رشوت کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے

انھوں نے اس معاملے میں پولیس جانچ کی بات بھی کہی ہے۔ اور مقامی میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے ’ہمیشہ جانچ کے اعلی ترین معیار کو برقرار رکھا ہے۔‘

بھارت کی اہم اپوزیشن پارٹی بی جے پی نے اعلان کر دیا تھا کہ دونوں وزراء کے استعفے تک پارلیمان کی کارروائی نہیں چلنے دی جائے گی۔

کانگریس پارٹی نے کہا ہے کہ’بدعنوانی میں ملوث کسی بھی فرد کو پارٹی معاف نہیں کرے گی۔‘

وجے سنگلا کو سی بی آئی نے مبینہ طور 90 لاکھ روپے کی رشوت لیتے ہوئے گرفتار کیا تھا۔

کہا جا رہا ہے کہ سنگلا نے یہ رقم مبینہ طور پر ریلوے بورڈ کے ایک رکن مہیش کمار کو ایک خاص عہدے دینے کی عوض میں لیا تھا۔

اس معاملے میں بنسل کے ذاتی سیکرٹری راہول بھنڈاری سے سی بی آئی کی پوچھ گچھ کے بعد سے بنسل کی مشکلات اور بڑھ گئی تھیں۔ راہل بھنڈاری 1997 بیچ کے ائی اے ایس افسر ہیں۔

پارلیمانی امور کے وزیر مملکت راجیو شکلا نے کہا، ’اگر انہیں کلین چٹ مل جاتی ہے تو وہ واپس آ سکتے ہیں۔‘

اسی بارے میں